Wednesday , August 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ونپرتی میں ریڈیشن سے انسانی صحت کو خطرہ لاحق

ونپرتی میں ریڈیشن سے انسانی صحت کو خطرہ لاحق

ونپرتی ۔ 13 ۔ نومبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ونپرتی کی آبادی فی الحال ایک لاکھ سے زائد ہے ۔ ونپرتی میں روز بروز ریڈیشن بڑھتا جارہا ہے ۔ ونپرتی میں سیل ٹاور کی تعداد روز بروز بڑھ رہے ہیں جس سے ونپرتی کی عوام کی صحت متاثر ہونے کا خطرہ لاحق ہے ۔ ریڈیشن کو روکنے کہتے ونپرتی میونسپل عہدیدار اقدامات کرنے کے بجائے میونسپل کو ڈپازٹ کے نام پر وصول ہونے والے رقم کو مدنظر رکھتے ہوئے بے دھڑک من مانی سیل ٹاور کی اجامت دے دی کہ ونپرتی کی عوام کی صحت کو خطرہ میں ڈال رہے ہیں ۔ ونپرتی فی الوقت 5 کیلو میٹر کے دائرہ میں موجود ہے اس میں 30 سے زائد سیل ٹاور نصب کئے گئے ہیں ۔ حال ہی میں ونپرتی میں 4G کیلئے کئی کمپنیوں نے سیل ٹاور نصب کرنے سڑک کے بازو کیبل وائر کیلئے کھدائی کی ہے ۔ اس سے میونسپل عہدیداروں کو لاکھ روپئے ڈپازٹ حاصل کر کے اجازت دی ہے ۔ حکومت کے جی او کے مطابق 20W ریڈیشن ہی رہنا چاہئے لیکن 40 تا 60 واٹس ریڈیشن ونپرتی میں پائے جانے کا کئی لوگوں نے شناخت کی ہے ۔ سیل ٹاور کی تنصیب میں لاپرواہی سے عوام میں خوف دہشت کا ماحول دیکھا جارہا ہے ۔ شہر ونپرتی میں سیل ٹاور کو پرائیویٹ اسکولس ، سلم علاقوں ، نئی کالونیاں میں مکانوں کے بالکل قریب نصب کیا جارہا ہے ۔ سیل ٹاور کی تنصیب کیلئے اصول کے مطابق ٹاور نصب کرنے کی جگہ کے قریب مکانوں کے مالکین اور میونسپل عہدیداروں سے نو ایجکشن سرٹیفیکٹ حاصل کرنا ضروری ہے لیکن ونپرتی میں اس طرح کا کوئی اصول و ضوابط پر عمل نہیں ہورہا ہے ۔ سیل ٹاور نصب کرنے والے کمپنیوں کے ذمہ دار اس اصول و ضوابط کو توڑ کر سیل ٹاور نصب کرنے کی کئی لوگوں نے شکایت کی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT