Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / ووٹنگ مشین کو پرنٹرس سے مربوط کیا جائے

ووٹنگ مشین کو پرنٹرس سے مربوط کیا جائے

تلنگانہ کانگریس کا مطالبہ ۔ ہائیکورٹ میں درخواست کا ادخال
حیدرآباد ۔ 23 ۔ فروری : ( سیاست نیوز) : تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی ورنگل اور کھمم کے میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کو پرنٹرس سے مربوط کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے ہائی کورٹ سے رجوع ہوئی ہے ۔ الیکشن کمیشن پر ٹی آر ایس کی تابعدار بن کر کام کرنے کا الزام عائد کیا ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ترجمان اعلی پردیش کانگریس کمیٹی مسٹر شرون کمار نے کہا کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کو پرنٹرس لگانے کی سپریم کورٹ نے ہدایت دی ہے ۔ تاہم اسٹیٹ الیکشن کمیشن سپریم کورٹ کی ہدایت کو نظر انداز کررہی ہے اور ٹی آر ایس کی تابعدار بن کر کام کررہی ہے ۔ جس کے خلاف کانگریس پارٹی ہائی کورٹ
سے رجوع ہوئی ہے اور ہائی کورٹ نے 15 مارچ سے قبل پٹیشن داخل کرنے کی تلنگانہ حکومت کو ہدایت دی ہے ۔ مسٹر شرون کمار نے گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن میں بے قاعدگیاں کرتے ہوئے کامیابی حاصل کرنے کا ٹی آر ایس پر الزام عائد کیا ۔ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں الیکشن کمیشن نے نوٹا کی سہولت فراہم نہ کرتے ہوئے حکومت کے دباؤ میں کام کیا ہے ۔ کانگریس کے احتجاج کے بعد ہی ورنگل اور کھمم کے لیے نوٹا کی سہولت فراہم کرنے کا دعویٰ کیا ۔ مسٹر شرون کمار نے ٹی آر ایس حکومت پر سیاسی فحاشی کو فروغ دینے کا الزام عائد کیا ۔ سابق وزیر مسٹر بی ساریا کی ٹی آر ایس میں شمولیت کے تعلق سے پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے بی ساریا کو ٹی آر ایس کا مخبر قرار دیتے ہوئے کہا کہ پارٹی نے اس لیے انہیں معطل کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن سے قبل پارٹی قائدین کا سیاسی وفاداریاں تبدیل کرنا عام بات ہے ۔ بی ساریا کے پارٹی چھوڑنے سے کانگریس کو کوئی نقصان نہیں ہوگا ۔ پارٹی نوجوان نسل کی خدمات سے استفادہ کرے گی اور نوجوانوں کو بھی صلاحیتیں ابھارنے کا موقع ملے گا ۔

TOPPOPULARRECENT