Thursday , October 19 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ووٹ بینک کی سیاست سے ملک کو نقصان

ووٹ بینک کی سیاست سے ملک کو نقصان

نظام آباد میں بی جے پی کارکنوں کے اجلاس سے مرکزی وزیر بی دتاتریہ کا خطاب
نظام آباد:29؍ جنوری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)مرکزی وزیر مسٹر بنڈارو دتاتریا نے ضلع نظام آباد کے مپکال منڈل میں بی جے پی کے کارکنوں کے ایک اجلاس سے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ملک تمام شعبوں میں تیزی کے ساتھ ترقی کررہا ہے اور وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں ملک کی ترقی کی راہ پر گامزن ہے ۔ مسٹر دتاتریا نے کہا کہ قبل از حکمرانی کرنے والے تمام سیاسی جماعتیں ووٹ بینک کی سیاست کے ذریعہ ملک کو نقصان پہنچایا اور غریبی کے خاتمہ کیلئے ملازمتوں کی فراہمی کیلئے کوئی اقدامات نہیں کئے گئے اور مذہب کی آڑ میں سیاست کرنا سراسر غلط ہے مرکزی حکومت کسانوں کو کھاد اور تخم کی سربراہی کے علاوہ فصل بیما یوجنا کے تحت امداد فراہم کرنے کیلئے مرکزی حکومت کی پالیسیوں کی عمل آوری میں ریاستی حکومت کی کارکردگی اہمیت کی حامل ہے مرکزی حکومت نے خشک سالی کے تحت ریاست کو 791کروڑ روپئے منظور کیا ہے اور ان میں سے ضلع نظام آباد کیلئے 116کروڑ روپئے منظور کئے گئے اور 155 کروڑ روپئے کے تعمیر کئے گئے ایس آر ایس پی پائپ لائن کے ذریعہ آبی سہولتیں فراہم کی جانے والی واٹر اسکیم پانی نہ ہونے کی وجہ سے بند پڑی تھی مسٹر دتاتریا نے کہا کہ سابق میں مملکتی وزیر ریلوے کی حیثیت سے پدا پلی کریم نگر ریلوے لائن کیلئے فنڈس مختص کئے گئے تھے 250 کروڑ روپئے سے نظام آباد ، موڑتاڑریلوے لائن کی تعمیر عمل میں لائی گئی ۔ مسٹر دتاتریا نے بتایا کہ نوٹ بندی رشوت ستانی کے خاتمہ اور دہشت گردی کے خاتمہ کیلئے کئے گئے تاریخ ساز فیصلہ ہے جموں کشمیر احتجاجی پروگراموں کی وجہ سے 850 کروڑ روپئے کا کالا دھن باہر نہیں آسکا نوٹ بندی کے بعد عوام کو بینکوں کی قطار میں ٹھہرتے ہوئے احتجاجوں کو مسترد کرنے پر انہوں نے مسرت کا اظہار کیااپوزیشن جماعتیں تحریک چلاتے ہوئے کئی پروگرامس کو انجام دیاراہول گاندھی ، کجریوال ، ممتا بنرجی کی خلاف ورزی کے باوجود بھی عوام پر کوئی اثر نہیں ہوا۔ متحدہ ریاست میں انتخابات منعقد کرنے کی صورت میں بی جے پی کو 32 نشستیں حاصل ہوں گے ضلع میں ہلدی بورڈ کے قیام کیلئے حکومت کوشاں ہے بی جے پی کے استحکام کیلئے بنیادی طورپر کام کرنے کی خواہش کی ۔ اس موقع پر سابق رکن اسمبلی اینڈالہ لکشمی نارائنا ، بی جے پی ضلع صدر گنگاریڈی کے علاوہ و دیگر بھی موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT