Tuesday , August 22 2017
Home / کھیل کی خبریں / وکٹوں کے پیچھے کیچ کے لئے نئی ٹیکنالوجی متعارف

وکٹوں کے پیچھے کیچ کے لئے نئی ٹیکنالوجی متعارف

لندن ۔22 اپریل (سیاست ڈاٹ کام )کرکٹ میں امپائرز کی آسانی اور بیاٹ کا کنارہ لیکر آنے والی گیند  کے لئے ایک نئی ٹیکنالوجی متعارف کروانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ بال ٹریکنگ ٹیکنالوجی ہاک آئی کے موجد پال ہاکنز نے آسٹریلیائی پانچ سینٹ کے سکے کے حجم کے برابر بیٹ سینسر تیار کیا ہے جس میں اسمارٹ فون ایپ ہے جو بلے سے لگنے والے ہلکے سے ہلکے  ایج (کنارہ) کو بھی بتا سکے گی۔ میدان میں کھڑے ہونے والے دونوں امپائر ہر گیند کو ریکارڈ کرنے کے لئے اپنے اسمارٹ فون جیکٹ کے ساتھ منسلک کریں گے تاکہ ری پلے دیکھ سکیں اور انہیں اس بات میں مدد مل سکے کہ گیند کہاں پچ ہوئی تھی اور ایل بی ڈبلیو فیصلوں میں انہیں آسانی مل سکے۔ اب منصوبہ یہ ہے کہ ابتدا میں اس کو انگلینڈ میں کلب سطح پر متعارف کروایا جائے گا جہاں 46 ڈالرس مالیت کے اس نازک سینسر کو باآسانی بلے میں نصب کیا جا سکے گا۔ اس ٹیکنالوجی کے موجد اور سابق کرکٹر ہاکنز نے کہا کہ ابتدا میں یہ ٹیکنالوجی عوامی سطح پر استعمال نہیں کی جا سکے گی۔ انہوں نے کہا کہ انہیں ٹیکنالوجی کا خیال گزشتہ سال ہیمپشائر لیگ کرکٹ میچ کھیلتے ہوئے آیا جب ایک بیٹسمین کے بیاٹ سے گیند لگ کر وکٹ کیپر کے پاس پہنچی لیکن اسے ناٹ آؤٹ قرار دیا گیا۔ ہاکنز نے مزید کہا کہ جس چیز نے مجھے حیران کیا وہ یہ کہ اس واقعہ کے بعد فیلڈرز نے بیٹسمین پر جملے کسنا شروع کئے تو اس نے کہا کہ مجھے معلوم ہے کہ میرے بیاٹ سے ایج لگا تھا اور تم بھی یہ بات جانتے تھے لیکن مجھے آؤٹ نہیں دیا گیا۔ یہ بیاٹ میں ہونے والی معمولی سے معمولی سرسراہٹ کو بھی محسوس کرے گا اور اسمارٹ فون ایپ سے منسلک ہو کر بین الاقوامی کرکٹ میں مستعمل ریئل ٹائم اسنیکو ٹیکنالوجی کی طرح دکھائے گا۔ ہاکنز نے کہا کہ ہم نے کلب میچوں میں اس کا تجربہ کیا ہے ساتھ ہی دعویٰ کیا کہ اس سے بیاٹ سے لگنے والی معمولی سے معمولی ایج حتیٰ کہ ‘پر’ لگنے کا بھی باآسانی پتہ چل جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT