Sunday , October 22 2017
Home / کھیل کی خبریں / ویسٹ انڈیز میں ہندوستان ہیٹ ٹرک کا خواہاں

ویسٹ انڈیز میں ہندوستان ہیٹ ٹرک کا خواہاں

=    آج پہلے ٹسٹ کا آغاز
=    2007ء میں ڈراویڈ، 2011 ء میں دھونی اور اب کوہلی کامیابی کے خواہاں
=    مقابلہ کا مشاہدہ ہندوستان میں شام 7:30بجے سے کیا جاسکتا ہے
اینٹیگا۔20 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) نئے کوچ انیل کمبلے کی سرپرستی میں پرعزم ہندوستانی ٹیم ویسٹ انڈیز کے خلاف ٹسٹ سیریز میں فتوحات کی ہیٹ ٹرک کرنے کی خواہاں ہے جیسا کہ دونوں ٹیموں کے درمیان کل یہاں 4 ٹسٹ مقابلوں کی سیریز کا پہلا مقابلہ شروع ہوگا۔ نئے کوچ انیل کمبلے کے علاوہ ٹسٹ ٹیم کے کپتان ویراٹ کوہلی کے لئے بھی متواتر تیز سیریزوں میں کامیابی کا یہ بہترین موقع ہے کیوں کہ وہ پہلے سری لنکا کے خلاف 2-1 اور پھر جنوبی افریقہ کے خلاف 3-0 کی کامیابی درج کرواچکے ہیں۔ ویسٹ انڈیز کے خلاف ہندوستان کو سیریز میں ہیٹ ٹرک کرنے کا یہ بہترین موقع ہے کیوں کہ اس سے قبل 2007ء میں راہول ڈراویڈ اور 2011ء میں مہندر سنگھ دھونی نے اپنی ٹیم کو فتوحات دلواچکے ہیں۔ ویراٹ کوہلی کی زیر قیادت ہندوستانی ٹیم کو میزبان ٹیم کے خلاف کامیابی حاصل کرنا اتنا مشکل نہیں ہوگا کیوں کہ میزبان ٹیم محدود اوورس کی کرکٹ میں جہاں عالمی چمپئن ہونے کا اعزاز حاصل کیا ہے وہیں طویل طرز کی کرکٹ میں اس کے مظاہرے مایوس کن ہیں۔ 4 ٹسٹ مقابلوں کی سیریز میں ہندوستان کو سست وکٹیں ملنے کی امید کی جارہی ہے جیسا کہ پہلے ٹسٹ کے آغاز سے دو دن قبل بھی یہاں کی وکٹ پر گھاس موجود تھی۔ لیکن ہندوستانی انتظامیہ کو امید ہے کہ 5 دنوں کے دوران یہ گھاس بیٹسمینوں کو پریشان نہیں کرے گی۔ ہندوستانی ٹیم کے لئے پہلے ٹسٹ میں قطعی 11 کھلاڑیوں کا انتخاب کسی قدر مشکل دکھائی دے رہا ہے

 

جیسا کہ مہمان ٹیم نے 2 ٹور مقابلوں میں 13 کھلاڑیوں کو موقع دیا ہے۔ امکانات ہیں کہ کوہلی 5 بولروں کے فارمولے کے ساتھ میدان سنبھالیں گے۔ قطعی 11 کھلاڑیوں کے انتخاب کے متعلق کئی باتیں کی جارہی ہیں جیسا کہ وکٹوں کے سست برتائو کے پیش نظر امت مشرا کو اسٹیورٹ بینی پر سبقت حاصل رہے گی۔ علاوہ ازیں فاسٹ بولر ایشانت شرما کے ساتھی کا فیصلہ بھی اہمیت کا حامل ہے۔ کیوں کہ امیش یادو سری لنکا اور جنوبی افریقہ کے خلاف محمد سمیع کے غیاب میں بہتر مظاہرہ کرچکے ہیں لیکن اب محمد سمیع بھی مکمل فٹ ہوکر اپنے انتخاب کی دعویداری پیش کرچکے ہیں۔ 5 بولروں کے انتخاب کے فیصلے کی صورت میں اوپنر روہت شرما کو پھر ایک مرتبہ میدان کے باہر بیٹھنا پڑسکتا ہے۔ جیساکہ وہ دوسرے وارم اپ مقابلہ میں بھی ٹیم کا حصہ نہیں تھے۔ نمبر 3 پر چٹیشور پوجارا اور لوکیش راہول کے درمیان کسی ایک انتخاب اہمیت کا حامل ہے۔ راہول حالیہ دنوں میں بہترین مظاہرہ کرنے کے علاوہ پوجارا کے مقام پر گزشتہ سیریز میں نمبر 3 پر بیٹنگ کرتے ہوئے بہتر مظاہرہ کیا ہے۔ پوجارا اور راہول کے درمیان انتخاب کے علاوہ اوپنرس کی جوڑی کے لئے مرلی وجئے اور شکھر دھون کی نیٹ میں دیر تک پراکٹس نے بھی کئی امکانات کو جگادیا ہے۔ راہول گزشتہ 9 ماہ سے بہترین مظاہرہ کررہے ہیں، محدود اوورس کی کرکٹ میں بھی انہوں نے بہتر مظاہرہ کرنے کے علاوہ ٹور میچ میں بھی نصف سنچری اسکور کی ہے۔ دوسری جانب میزبان ٹیم کے لئے 13 رکنی ٹیم میں ڈیرن براوو 42 اور مارلون سامیولس 64 مقابلوں کا تجربہ رکھتے ہیں۔ اس جوڑی کے علاوہ ٹیم میں موجود دیگر کھلاڑیوں میں اکثریت غیر تجربہ کار ہے۔ ان حالات میں کپتان جیسن ہولڈر اپنے سینئر کھلاڑیوں سے بہتر مظاہرے کی امید کررہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT