Wednesday , October 18 2017
Home / دنیا / ویومنگ کے ری پبلکن کنونشن میںٹیڈ نے ٹرمپ کو شکست دے دی

ویومنگ کے ری پبلکن کنونشن میںٹیڈ نے ٹرمپ کو شکست دے دی

چیین( ویومنگ) ۔17اپریل ( سیاست ڈاٹ کام)  ٹیڈ کروز نے آج ویومنگ ریاست کے ری پبلکشن کنونشن میں تمام 14مندوبین کے ووٹ حاصل کرلئے ۔ ٹیکساس کے رکن سینٹ کی منگل کی اہم نیویارک پرائمری سے قبل ٹیکساس کیلئے ٹیڈ کروز کی یہ شاندار کامیابی ہے ۔ متنازعہ صدارتی امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ کو شکست فاش ہوئی ۔ ٹرمپ نے صرف ایک ڈیلیگیٹ کا ووٹ حاصل کیا جب کہ اُس کے حریف ٹیڈ کروز کو 9ووٹ حاصل ہوئے ۔ ہفتہ کے ریاستی کنونشن میں کروز نے تمام 14 ری پبلکن قومی کنونشن مندوبین کے ووٹ حاصل کئے تھے ۔ فلوریڈا کے رکن سینٹ مارکو روبیو کو صرف ایک ڈیلیگٹ کا ووٹ حاصل ہوا دیگر چار نے ووٹ دینے سے گریز کیا ۔ اگرآپ چاہتے ہیںکہ ڈونالڈ ٹرمپ نامزد کئے جائیں اور اگر آپ نہیں چاہتے کہ عام انتخابات ہلاری کلنٹن کے سپرد کردیئے جائیں تو ٹرمپ کی نامزدگی کو مسترد کردیں ‘ اسکے بعد میں آپ سے خواہش کروں گا کہ ریاست کے مرد و خواتین اُن کی تائیدکرتے ہیں ۔ کامیابی کے بعد خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ریاست کے 12ارکان جنہوں نے ان کی تائید کی ہے اور یہ عہد کیا ہے کہ اُن کی تائید کلیولائنڈ میں بھی جاریرکھیں گے ۔ کروز کیلئے ویومنگ کی کامیابی ایک اور اشارہ ہے کہ اُن کی انتخابی مہم کا انتظام پارٹی  کے داخلی حلقوں میں اور کارکنوں نے کس طرح کیا ہے ‘ جس کے نتیجہ میں ٹرمپ کیلئے 1237 ڈیلیگیٹ کے ووٹ حاصل کرنا مشکل ہوگیا ہے ۔

جن کے حصول کے بعد بھی وہ ری پبلکن پارٹی کے صدارتی امیدوار نامزد کئے جاسکتے ہیں ۔ ہفتہ کے دن کامیابی کے بعد ٹیڈ کروز نے ریاست کے 29ڈیلیگیٹ میں سے 24 ڈیلیگٹ سے ووٹ حاصل کرلئے ۔ اس طرح انہیں پارٹی کے ارکان نے منتخب کرلیا ہے ۔جب کہ عام رائے دہندوں کی تائید ابھی ظاہر نہیں ہوئی ‘ تاہم جائیداد کے شعبہ کے ارب پتی کو مندوبین کے درکار تعداد نامزدگی حاصل کرنے کیلئے کم ہوسکتی ہے ۔ 8نومبر کو ملک کے صدارتی انتخابات مقرر ہیں ۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ کنونشن میں امیدواروں کے درمیان سخت مقابلہ ہوگا ۔ ڈونالڈ ٹرمپ کی توجہ نیویارک پرائمری پر مرکوز ہے یہ ایک اہم پرائمری ہے ‘ جسکی رائے دہی 19اپریل کو ہوگی ۔ نیویارک سے ری پبلکن پارٹی کے 95 ڈیلیگیٹ ہیں جبکہ ڈیموکریٹک پارٹی کے 2امیدوار شہر کے 247 ڈیلیگیٹس کی تائید حاصل کرنے کیلئے جدوجہد میں مصروف ہیں ۔ ری پبلکن پارٹی کئی سینئر قائدین نے کروز کی تائید کی ہے ۔ ٹکساس کے کنزرویٹیو پارٹی کے رکن سینٹ کو اندیشہ ہے کہ ٹرمپ کے متنازعہ تبصرے انہیں نومبر کے انتخابات کیلئے ایک کمزور امیدوار ثابت کرتے ہیں ۔ ویومنگ کے مقابلہ کے نتائج سے کروز کو 559ڈیلیگٹس کی تائید حاصل ہوسکتی ہے ۔جب کہ ٹرمپ کو 743 ڈیلیگٹس کی تائید حاصل ہے ۔ ڈیموکریٹک پارٹی میں ہلاری کلنٹن کو 1758 کی سبقت اپنے حریف امیدوار برنی سینڈرس پر حاصل ہے ۔ جنہیں 1076 ڈیلیگٹس کی تائید حاصل ہوچکی ہے ۔اس طرح ڈیموکریٹک پارٹی میں بھی صدارتی امیدوار کی نامزدگی کیلئے سخت مسابقت کا سامناہے۔

TOPPOPULARRECENT