Wednesday , September 20 2017
Home / ہندوستان / ٹاملناڈو کے کسانوں کی حالت زار ، قرض معافی ضروری

ٹاملناڈو کے کسانوں کی حالت زار ، قرض معافی ضروری

وزیراعظم نریندر مودی صورتحال کا نوٹ لیں ، نغمہ کی اپیل
نئی دہلی12اپریل (سیاست ڈاٹ کام)  فلم اداکارہ ،آل انڈیا خواتین کانگریس کی جنرل سکریٹری اور ٹاملناڈو اور پڈوچیری کی انچارج نغمہ نے وزیر اعظم نریندر مودی پر ٹاملناڈوکے کسانوں کی بدحالی اورپریشانیوں کو نظرانداز کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہاکہ مسٹر مودی کسانوں کی بہبود سے متعلق صرف زبانی جمع خرچ سے کام لے رہے ہیں اور زمین پر اس کی کوئی حقیقی شکل نظر نہیں آرہی ہے ۔ نغمہ نے جنترمنتر پر دھرنے پر بیٹھے ٹاملناڈو کے کسانوں سے ملنے کے بعد یو این آئی سے خصوصی بات چیت میں انہوں نے کہاکہ پورے ملک میں کسان خشک سالی، ژالہ باری اور دوسرے قدرتی آفات سے پریشان ہیں لیکن موجودہ مرکزی حکومت کاپوریٹ گھرانوں کا قرض تو معاف کر رہی ہے لیکن ملک کا پیٹ بھرنے والے کسانوں کو بالکل نظر انداز کردیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ آئے دن کسان مالی پریشانی اور قرض کے بوجھ تلے دبے ہونے کی وجہ سے خودکشی کر رہے ہیں لیکن مرکزی حکومت کسانوں کا کوئی سدھ لینے کو تیار نہیں ہے ۔انہوں نے وزیر اعظم سے مطالبہ کیا کہ کسانوں کی بدحالی اور قدرتی آفات کے شکار کسانوں کے لئے نیتی آیوگ کے ذریعہ ایسی پالیسی وضع کریں جس سے ہر سال سیلاب ، خشک سالی اور قدرتی آفات سے متاثر ہونے والے کسانوں کے نقصان کا ازالہ ہوسکے ۔

TOPPOPULARRECENT