Sunday , October 22 2017
Home / دنیا / ٹرمپ اور پوپ فرانسس کی پہلی تاریخی ملاقات

ٹرمپ اور پوپ فرانسس کی پہلی تاریخی ملاقات

وٹیکن سٹی۔ 24 مئی (سیاست ڈاٹ کام) امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے وٹیکن میں آج پوپ فرانسس سے ملاقات کی جس کا عرصہ دراز سے انتظار کیا جارہا تھا جس وقت انہوں نے پوپ فرانسس سے بالکل خانگی نوعیت کی ملاقات کی اس وقت خاتون اول وہ واحد تیسری شخصیت تھی جو وہاں موجود تھی۔ ابتداء میں دونوں نے مصافحہ کیا اور اس وقت فوٹوگرافرس ان کے آس پاس تھے لیکن اس کے بعد 20 منٹ کی طویل بات چیت صرف پوپ فرانسس اور ٹرمپ کے درمیان ہوئی۔ ٹرمپ اپنے پہلے بیرونی سفر کے تیسرے مرحلہ میں وٹیکن پہنچے۔ قبل ازیں وہ سعودی عرب اور اسرائیل بھی گئے تھے۔ یہاں اس بات کا تذکرہ دلچسپ ہوگا کہ پوپ فرانسس اور ٹرمپ کے درمیان کبھی کوئی ملاقات نہیں ہوئی اور آج ہوئی ملاقات بالکل پہلی تھی جبکہ ٹرمپ کی صدارتی انتخابات کی مہمات کے دوران ایسے کئی موضوعات تھے جن پر ٹرمپ اور پوپ فرانسس کے درمیان لفظی تکرار بھی ہوئی۔ مائیگریشن، موسمی تغیر کچھ ایسے موضوعات تھے جن پر ٹرمپ اور فرانسس کے درمیان لفظی جھڑپ بھی ہوئیں۔ سزائے موت اور ہتھیاروں کی تجارت پر بھی دونوں قائدین کے درمیان اختلافات پائے گئے تھے، البتہ اسقاط حمل کی مخالفت کرنے میں دونوں قائدین کے درمیان کوئی اختلاف نہیں تھا۔ ٹرمپ کے ساتھ خاتون اول میلانیا اور ان کی دختر ایوانکا سیاہ لباس زیب تن کئے ہوئے تھے جو دراصل وٹیکن کے پروٹوکول میں شامل ہیں حالانکہ مختلف ممالک کے سربراہان کی بیویاں دورہ پر آنے کے بعد عام طور پر سیاہ لباس زیب تن نہیں کرتیں۔ ٹرمپ اور پوپ فرانسس نے خانگی لائبریری میں ملاقات کی جو فرانسس کی سرکاری رہائش گاہ ہے حالانکہ عام طور پر پوپ فرانسس یہاں نہیں رہتے بلکہ انہوں نے ایک معمولی گیسٹ ہاؤز میں رہائش اختیار کی ہے۔ ٹرمپ چہارشنبہ کی سہ پہر کو بروسلز روانہ ہوں گے جہاں وہ یوروپی یونین اور ناٹو عہدیداروں سے ملاقات کریں گے۔ بعدازاں وہ اٹلی کے شہر سسلی لوٹ آئیں گے جہاں وہ جمعہ اور ہفتہ کو G-7 چوٹی کانفرنس میں شرکت کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT