Tuesday , August 22 2017
Home / Top Stories / ٹرمپ کیخلاف پانچ خواتین کا جنسی ہراسانی کا الزام

ٹرمپ کیخلاف پانچ خواتین کا جنسی ہراسانی کا الزام

نیویارک ۔ 13 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) ریپبلکن صدارتی امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ اب خواتین کے معاملہ میں کافی بدنام ہوتے جارہے ہیں کیونکہ پانچ خواتین نے شکایت کی ہیکہ ٹرمپ نے انہیں جنسی طور پر ہراساں اور ان کا استحصال کیا تھا۔ اب جبکہ انتخابات کو ایک ماہ سے بھی کم عرصہ باقی رہ گیا ہے، ٹرمپ کے خلاف خواتین کا یہ انکشاف ان کی انتخابی ریالیوں پر اثر انداز ہوسکتا ہے۔ 2005ء میں تیار کئے گئے ایک ویڈیو کے منظرعام پر آنے کے بعد ہی یہ پتہ چلا کہ انہوں نے خواتین سے متعلق ہمیشہ جنس زدگی اور توہین آمیز بیانات ہی دیئے۔ ان کے خلاف کہا جارہا ہیکہ وہ خوبصورت خواتین کے جسموں کو ٹٹولا کرتے تھے اور بدنیتی سے ان کے مخصوص حصوں کو چھوا کرتے تھے اور خود کو کسی بھی جوابدہی سے اس لئے آزاد سمجھتے تھے کیونکہ وہ اپنے آپ کو ایک ’’اسٹار‘‘ تصور کرتے تھے۔ نیویارک ٹائمز نے ٹرمپ کے اس ’’ٹٹولنے‘‘ کو تفصیلی طور پر پیش کیا ہے۔ دو خواتین نے کہا کہ آج سے تیس سال قبل جب وہ ایک طیارہ میں ٹرمپ کے ساتھ سوار تھیں تو انہوں نے بازو والی نشست کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ان کے جسم کو ٹٹولا تھا۔ دوسری طرف ڈیموکریٹک صدارتی امیدوار ہلاری کلنٹن نے بھی ٹرمپ پر الزام عائد کیا کہ خواتین کے خلاف نازیبا بیانات دیکر ٹرمپ نے اپنی انتخابی مہم کی توہین کی ہے۔ کولوراڈو میں ایک انتخابی ریالی سے خطاب کرتے ہوئے ہلاری نے کہا کہ ٹرمپ نے اب انتہائی توہین آمیز لب و لہجہ اختیار کرلیا ہے۔ خصوصی طور پر خواتین کے خلاف تو وہ زہر اگل رہے ہیں۔ ہلاری نے بھی ویڈیو کے انکشاف پر تبصرہ کرتے ہوئے کہاکہ اب ساری دنیا جان گئی ہیکہ ٹرمپ خواتین کے ساتھ کیا سلوک کرتے تھے اور کیا سلوک کررہے ہیں۔

 

امریکی عوام ٹرمپ کو ووٹ دیں یا نیوکلیر جنگ کا سامنا کریں:پوٹین کے حلیف کا انتباہ
ماسکو ۔ /13 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکی عوام آئندہ ماہ انتخابات میں ڈونالڈ ٹرمپ کو ووٹ دیں یا پھر ایک نیوکلیر جنگ میں گھسیٹے جانے کے خطرات منڈلاتے رہیں گے ۔ صدر روس ولادیمیر پوٹین کے کٹر حریف ولادیمیر زرینووسکی نے یہ بات کہی جو خود کا موازنہ امریکی ریپبلکن امیدوار سے کرتے ہیں ۔ ولادیمیر زرینووسکی شعلہ بیان قانون ساز ہیں جنہوں نے گزشتہ ماہ روس کے پارلیمانی انتخابات میں موافق کریملن لبرل ڈیموکریٹک پارٹی آف رشیا کو تیسرا مقام دلایا ۔ انہیں پوٹن نے اعلیٰ سرکاری ایوارڈ بھی دیا تھا ۔ انہوں نے ایک انٹرویو میں کہا کہ ڈونالڈ ٹرمپ ہی ایک ایسے شخص ہیں جو ماسکو اور واشنگٹن کے مابین بڑھتی کشیدگی کو کم کرسکتے ہیں ۔ اس کے برعکس ٹرمپ کی ڈیموکریٹک حریف ہیلاری کلنٹن عالمی تیسری جنگ بھڑکانے کا سبب بن سکتی ہیں ۔ امریکہ اور روس کے مابین روابط انتہائی خطرناک سطح پر پہونچ چکے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اس صورتحال کو مزید ابتر بنانے سے بچانے کیلئے ٹرمپ کا صدر امریکہ منتخب ہونا ضروری ہے ۔ امریکی عوام کو یہ سمجھنے لینا چاہئیے کہ وہ ٹرمپ کو ووٹ دیتے ہوئے کرہ ٔ ارض پھر امن کو یقینی بنارہے ہیں ۔ اگر انہوں نے ہیلاری کلنٹن کے حق میں ووٹ دیا تو دراصل انہوں نے جنگ کی تائید کی ہے ۔ اس کے بعد ہر جگہ ہیروشیما اور ناگاساکی ہوں گے ۔ واضح رہے کہ شام اور یوکرین کے مسئلہ پر واشنگٹن اور ماسکو کے مابین شدید کشیدگی اور اختلافات پائے جاتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT