Saturday , October 21 2017
Home / Top Stories / ٹرمپ کی پہلے بیرونی دورہ پر سعودی عرب آمد ، پرتپاک خیرمقدم

ٹرمپ کی پہلے بیرونی دورہ پر سعودی عرب آمد ، پرتپاک خیرمقدم

RIYADH, MAY 20 :- Saudi Arabia's King Salman bin Abdulaziz Al Saud meets with U.S. President Donald Trump and first lady Melania Trump during a reception ceremony in Riyadh, Saudi Arabia, May 20, 2017. REUTERS-13R

پیر میں تکلیف کے باوجود شاہ سلمان گولف کارٹ میں سوار ایئرفورس ون طیارے کی سیڑھیوں تک پہنچے
ریاض ۔20 مئی ۔(سیاست ڈاٹ کام) امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے بالآخر اپنے پہلے سرکاری بیرونی دورہ کا آغاز اپنے پروگرام کے مطابق سعودی عرب سے کیا جہاں وہ شاہ سلمان سے ملاقات کرتے ہوئے دونوں ممالک کے مستحکم تعلقات پر زور دیں گے ۔ خصوصی طورپر عالمی دہشت گردی کے قلع قمع پر دونوں قائدین کے درمیان اہم بات چیت ہوگی ۔ یاد رہے کہ عالمی دہشت گردی اس وقت کسی بھی ملک کے سربراہ کیلئے ایک اہم مدعا بن چکا ہے جہاں ہر کوئی یہ چاہتا ہے کہ اُس کا ملک دہشت گردانہ واقعات سے محفوظ رہے ۔ ایئرفورس ون کے ذریعہ ٹرمپ کل رات سعودی عرب کے لئے روانہ ہوئے تھے اور ریاض ایئرپورٹ پر اُن کا والہانہ استقبال کیا گیا جہاں شاہ سلمان نے خود طیارہ کی جانب آگے بڑھ کر سیڑھیوں سے اُترنے والے ٹرمپ سے مصافحہ کیا۔ یہاں اس بات کا تذکرہ دلچسپ ہوگا کہ ٹرمپ وہ پہلے امریکی صدر ہیں جنھوں نے اپنے پہلے سرکاری دورہ کا آغاز کسی مسلم ملک سے کیا ہو۔ ٹرمپ نے دراصل سعودی عرب کا انتخاب اس لئے کیا ہے کہ انھیں پتہ ہے کہ صدارتی انتخابات کے دوران مسلمانوں کے خلاف اُن کے شر انگیز بیانات کی وجہ سے اُن کے خلاف برہمی پائی جاتی ہے ۔ لہذا پہلا دورہ شاید مسلمانوں کے ’’زخموں پر مرہم‘‘ رکھنے کی نیت سے کیا جارہا ہے ۔ دوسری طرف ٹرمپ خود بھی یہ بات کئی بار کہہ چکے ہیں کہ مسلم ممالک کو اعتماد میں لئے بغیر دہشت گردی پر قابو پایا نہیں جاسکتا ۔ ریاض میں دو روزہ توقف کے بعد ٹرمپ کا اگلا مرحلہ اسرائیل ہوگا اور اُس کے بعد ویٹکن سٹی میں پوپ فرانسس سے ملاقات بھی اُن کے پروگرام میں شامل ہے ۔ سسلی میں مالدار ممالک کے گروپ 7 کے قائدین سے ملاقات اور بروسلز میں ناٹو کے اجلاس میں شرکت کرنا بھی اُن کی دیگر مصروفیات کا حصہ ہیں۔ ایرفورس ون کے ریاض ایرپورٹ پر لینڈ کرتے ہی صدر موصوف طیارہ کی سیڑھیوں پر خاتون اول میلانیا ٹرمپ کے ساتھ نمودار ہوئے ۔

81 سالہ شاہ سلمان اسو قت چلنے پھرنے میں تکلیف محسوس کررہے ہیں اور چلنے کیلئے ایک لکڑی کاسہارا لیتے ہیں ، انھیں ایک گولف کارٹ میں بٹھاکر طیارہ کی طرف لیجایا گیا ۔ اس موقع پر ٹرمپ نے کہاکہ سعودی عرب کا دورہ کرنا اُن ( ٹرمپ) کے لئے بہت بڑا اعزاز ہے ۔ ٹرمپ کے استقبال کیلئے فضاء میں کئی طیاروں نے سرخ سفید اور نیلے رنگ آسمان پر بکھیردیئے ۔ دوسری طرف وائیٹ ہاؤس کو بھی ٹرمپ کے اس دورہ سے کافی توقعات وابستہ ہیں کیونکہ نئے صدر نے جب سے اقتدار سنبھالا ہے انھیں کسی نہ کسی تنازعہ کا سامنا ہے ۔ گزشتہ ہفتہ ہی انھوں نے ایف بی آئی ڈائرکٹر جیمس کومی کو برطرف کردیا تھا جس پر انھیں اعلیٰ سطحی قانون سازوں کی جانب سے بھی تنقیدوں کا سامنا کرنا پڑا تھا ۔ جیمس کومی صرف اس بات کی تحقیقات کررہے تھے کہ آیا امریکی صدارتی انتخابات میں روس نے مداخلت کی ہے یا نہیں ۔ چہارشنبہ کو جسٹس ڈپارٹمنٹ نے بھی ڈیموکریٹس کی جانب سے مسلسل دباؤ کے بعد ایف بی آئی کے سابق سربراہ رابرٹ مُلر کو اس تحقیقات کیلئے خصوصی کونسل مقرر کیاہے ۔ بہرحال ٹرمپ کے سعودی پہنچتے ہی میڈیا میں یہ خبریں بھی گشت کررہی ہیں کہ انھیں جیمس کومی کو برطرف کرنے کے بعد راحت ضرور ہورہی ہے کیونکہ ایف بی آئی کے ڈائرکٹر کی تقرری کو لیکر وہ کافی فکرمند ضرور تھے  اور دوسرے یہ کہ اپنے پہلے بیرونی دورہ پر بھی وہ کافی جوش و خروش کا مظاہرہ کررہے تھے ۔ یہاں اس بات کاتذکرہ دلچسپ ہوگا کہ جیمس کومی نے سینیٹ کی انٹلیجنس کمیٹی کے روبرو مستقبل قریب میں پیش ہونے کی آمادگی ظاہر کردی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT