Thursday , August 17 2017
Home / Top Stories / ٹرمپ کی کٹرحریف رومنی سے ملاقات‘ عالمی مسائل پر تبادلہ خیال

ٹرمپ کی کٹرحریف رومنی سے ملاقات‘ عالمی مسائل پر تبادلہ خیال

روزنامہ ’’نیویارک ٹائمز‘‘ کا ٹرمپ کی مٹ رومنی سے ملاقات پر اعتراض ‘آئندہ وزیرخارجہ متوقع
نیویارک۔20نومبر ( سیاست ڈاٹ کام) اعتدال پسند ری پبلکن مٹ رومنی جنہوں نے ڈونالڈ ٹرمپ کو ’’ پاگل شخص ‘ بڑبولا اور دھوکہ باز ‘‘ قرار دیا تھا ۔ جب کہ انتخابی مہم جاری تھی ‘ آج منتخبہ صدر سے ملاقات کی اور عالمی اُمور پر ’’ دورس بات چیت ‘‘ ہوئی ۔ اطلاعات ہیں کہ انہیں آئندہ وزیر خارجہ امریکہ مقرر کیا جائے گا ۔ 2012ء کے ری پبلکن صدارتی امیدوار اور ٹرمپ کے انتہائی کٹر حریف ری پبلکن پارٹی کے نقاد نے جاریہ سال کے صدارتی انتخابی مہم کے دوران پوشیدہ طور پر منتخبہ صدر سے تقریباً ایک گھنٹہ طویل ملاقات کی تھی ‘  یہ ملاقات ٹرمپ کے خانگی گولف کورس میں جو بیڈمنسٹر نیوجرسی میں واقع ہے ہوئی تھی ۔ ملاقات کے بعد رومنی نے کوئی انکشاف نہیں کیا کہ کیا انہیں ٹرمپ انتظامیہ نے کوئی پیشکش کی ہے ۔ انہوں نے اخباری نمائندوں سے صرف اتنا کہا کہ ہمارے درمیان دورس تبادلہ خیال ہوا ہے جو دنیا کے مختلف مسائل پر تھا ‘ جس سے امریکہ کو نمایاں دلچسپی ہوسکتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ منتخبہ صدر سے ملاقات پر مسرور ہیں اور اگر جس انداز میں ٹرمپ کارروائی کررہے ہیں جاری رہے تو وہ آئندہ انتظامیہ کی مدد کریں گے ۔

رومنی ری پبلکن پرائمری میں ٹرمپ کی جانب سے ’’ دغاباز انسان ‘‘ قرار دیئے گئے تھے نے اپنے حامیوں سے کہا تھا کہ وہ ٹرمپ کو ووٹ نہ دیں ۔ انہوں نے 70سالہ ارب پتی کی تائید بھی روک دی تھی اور انہیں ’’ بڑبولا اور دھوکہ باز‘‘ قرار دیا تھا اور کہا تھا کہ وہ فائدوں کیلئے امریکی عوام کے جذبات سے کھلواڑ کررہے ہیں ۔ پیش قیاسی کی گئی ہے کہ ٹرمپ رومنی کو اپنی کابینہ میں بحیثیت وزیر خارجہ شامل کرنے پر غور کررہے ہیں ۔ دریں اثناء کثیر الاشاعت روزنامہ ’’ نیویارک ٹائمز‘‘ نے اعتدال پسند ڈونالڈ ٹرمپ کی ملاقات کو ’’ ایک دغاباز کی دوسرے بڑبولے اور دھوکہ باز‘‘ سے ملاقات قرار دیا اور کہا کہ انتخابی مہم کے دوران منتخبہ صدر اور ان کے کٹر حریف نے ایک دوسرے کو یہی کچھ قرار دیا تھا ۔ لیکن وہ اب عالمی اُمور پر دورس اثرات مرتب کرنے والے تبادلہ خیال میں مصروف ہیں اور قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں کہ مٹ رومنی کو آئندہ وزیر خارجہ مقرر کیا جائے گا ۔ ملاقات کے بعد رومنی نے ٹرمپ کی ستائش کی تھی ۔ ٹرمپ نے ملاقات کے بعد رومنی کے ساتھ چہل قدمی کی تھی اور اُن سے ملاقات کو ایک عظیم واقعہ قرار دیا تھا ۔ دونوں کییہ ملاقات ایک سیلاب پیدا کرسکتی ہے جس سے اُن کی ساکھ بھی متاثر ہوسکتی ہے اور امکان ہے کہ اُن کا رتبہ امریکی عوام کی نظر میں کم ہوجائے ۔

TOPPOPULARRECENT