Wednesday , July 26 2017
Home / Top Stories / ٹرمپ کے صدر بننے کے اندرون دیڑھ ماہ جے شنکر کا تیسرا دورہ امریکہ

ٹرمپ کے صدر بننے کے اندرون دیڑھ ماہ جے شنکر کا تیسرا دورہ امریکہ

اپنے ہم منصب میک ماسٹر سے ملاقات، H-1B ویزہ اور ہندوستانیوں کے تحفظ کے موضوع پر بات چیت

واشنگٹن ۔ 2 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) معتمدخارجہ ایس جے شنکر نے آج دو اعلیٰ سطحی امریکی عہدیداروں سے ملاقات کی، جن میں امریکہ کے قومی سلامتی مشیر لیفٹننٹ جنرل ایچ آر میک ماسٹر بھی شامل ہیں، جہاں انہوں نے ہند۔ امریکہ کے حکمت عملی تعلقات کو خصوصی طور پر تجارت، دفاع اور سیکوریٹی کے شعبوں میں مزید مستحکم کرنے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہیکہ جے شنکر اور میک ماسٹر کی ملاقات کو اس لئے بھی اہمیت کا حامل قرار دیا جارہا ہے کیونکہ صرف دس روز قبل ہی امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے انہیں امریکی قومی سلامتی مشیر مقرر کیا تھا۔ یہ ملاقات وائیٹ ہاؤس میں کی گئی تھی جہاں دونوں قائدین نے انسداد دہشت گردی، سیکوریٹی اور دفاعی شراکت داری کے موضوعات پر تفصیلی بات چیت کی۔ جے شنکر نے علاوہ ازیں ایوان  نمائندگان کے اسپیکر پال ریان سے بھی ملاقات کی جہاں مختلف موضوعات زیربحث آئے جن میں دونوں ممالک کے درمیان دفاعی تعاون سب سے زیادہ اہمیت کا حامل موضوع رہا۔ ملاقات کے بعد پال ریان نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ہند ۔ امریکہ تعلقات کوئی نئے نہیں ہیں بلکہ جمہوریت اور آزادی کی بنیاد پر دونوں حکومتوں نے اپنے اقدار کو جس طرح شیئر کیاہے وہ خود اپنے آپ میں ایک تاریخ ہے لہٰذا اب وقت آ گیا ہے اور بہت اچھا موقع بھی ہے کہ ہم باہمی تعلقات کو مزید مستحکم کریں تاکہ معاشی اور دفاعی تعاون کو نہ صرف مزید مستحکم کیا جائے بلکہ اسے بااعتماد بھی بنایا جاسکے۔ بااعتماد بنانے کا مطلب یہ نہیں کہ ہمیں ایک دوسرے پر اعتماد نہیں بلکہ اعتماد کا مطلب یہ ہیکہ دونوں ممالک ایک دوسرے کیلئے لازم و ملزوم بن جائیں۔ جے

شنکر سے ملاقات کے دوران پال ریان نے ہندوستانی انجینئر سرینواس کی موت پر بھی امریکی ایوان نمائندگان کی جانب سے اظہارتعزیت کیا اور انتہائی جذباتی انداز میں کہاکہ امریکی عوام متحد ہوکر ہندوستانی انجینئر کے قتل کی مذمت کرتے ہیں اور آنے والے دنوں میں ہم ہندوستانی معتمدخارجہ جے شنکر کے ساتھ کام کرنے کیلئے بے چین ہیں۔ یاد رہیکہ 32 سالہ ہندوستانی انجینئر سرینواس کوچی بوٹلا کو امریکی بحریہ کے ایک سابق عہدیدار آڈم پیورنٹن نے ایک شراب خانے میں اس وقت گولی مار کر ہلاک کردیا تھا جب دونوں میں کسی بات پر تکرار ہوگئی تھی جبکہ اطلاعات کے مطابق قاتل نے سرینواس کو دہشت گرد کہتے ہوئے اسے امریکہ سے چلے  جانے کہا تھا۔ فائرنگ میں سرینواس کا ساتھی آلوک مداسی زخمی ہوگیا تھا۔ یہاں اس بات کا تذکرہ بھی ضروری ہیکہ جے شنکر منگل کو امریکہ کے چار روزہ دورہ پر آئے ہیں جہاں وہ ٹرمپ انتظامیہ کے عہدیداروں سے بات چیت کریں گے۔ علاوہ ازیں قانون سازوں اور تھنک ٹینک برادری سے بھی ان کی ملاقات پروگرام میں شامل ہے۔ قابل ذکر بات یہ ہیکہ ٹرمپ کو صدر کے عہدہ  پر فائز ہوئے صرف دیڑھ ماہ کا عرصہ ہوا ہے تاہم جے شنکر کا ٹرمپ کے برسراقتدار آنے کے بعد امریکہ کا یہ تیسرا دورہ ہے۔ گذشتہ ماہ وزیراعظم ہند نریندر مودی سے بھی ٹرمپ نے ٹیلیفون پر بات چیت کی تھی اور دونوں ممالک کے مستحکم تعلقات کی ضرورت پر زور دیا تھا۔ اپنی انتخابی کامیابی سے صرف تین ہفتہ قبل ٹرمپ نے ہندوستانی نژاد امریکی شہریوں سے کہا تھا کہ وائیٹ ہاؤس میں وہ (ٹرمپ) ہندوستان کے بتہرین دوست ثابت ہوں گے۔ یہ بھی کہا جارہا ہیکہ جے شنکر امریکی عہدیداروں سے H-1B ویزہ سے متعلق ہندوستانیوں کے تجسس اور ان کے تحفظ کے موضوعات پر بھی بات چیت کریں گے جبکہ ٹرمپ انتظامیہ کے سینئر ارکان سے وہ دونوں ممالک کے مفاد میں علاقائی اور بین الاقوامی معاملات پر بھی بات چیت کریں گے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT