Sunday , October 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹریفک قواعد کی خلاف ورزی پر شکایت درج کروانے کا آسان راستہ

ٹریفک قواعد کی خلاف ورزی پر شکایت درج کروانے کا آسان راستہ

حیدرآباد ۔ 2 ۔ نومبر : ( ایجنسیز ) : عام طور پر لوگ ’ نو پارکنگ ‘ زونس میں ادھر اُدھر دیکھتے ہیں اور حالات ان کے حق میں ہونے پر اپنی گاڑیوں کو پارک کرتے ہیں لیکن اب ایسا نہیں ہوپائے گا کیوں کہ عوام کی جانب سے بھی اب ان کے لینس اور بائی لینس میں ٹریفک قواعد کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پارک کی جانے والی گاڑیوں کی اطلاع ’ حیدرآباد ٹریفک لائیو ‘ موبائیل اپلیکیشن کے ذریعہ پولیس کو دی جارہی ہے ۔ مکان کے مالک ، ایک شاکی پڑوسی یا متفکر شہری کی جانب سے قانون کی خلاف ورزی کی شکایت درج کروائی جاسکتی ہے ۔ اس اپلیکیشن کے آغاز کے بعد 10 دن میں حیدرآباد ٹریفک پولیس کو اس طرح کی 40 سے زائد شکایات موصول ہوئی ہیں ۔ اس ایپ کو چہارشنبہ تک تقریبا 13000 مرتبہ ڈاؤن لوڈ کیا گیا ۔ اس کے لیے اس اپلیکیشن میں پبلک انٹر فیس آئیکان کو ٹیاپ آن کرنا ہوگا ۔ گاڑی کے فوٹوز ، شکایت کا زمرہ ، روانہ کرنا ہوگا اور خلاف ورزی کی تفصیلات داخل کرنا ہوگا جیسے وقت ، مقام ، خلاف ورزی کی نوعیت اور فون نمبر ۔ اگر گاڑی کا رجسٹریشن نمبر صاف ہو تو ٹریفک پولیس ایک چالان جاری کرے گی ۔ تاہم جھوٹی شکایتیں مستوجب سزا ہوں گی ۔ مقررہ بس اسٹاپس پرنہ ٹھہرا کی جانے والی آر ٹی سی بسیس اور آٹو ڈرائیورس کا نازیبا رویہ بھی اس اپلیکیشنس کے ذریعہ درج کروائی گئی ۔ شکایتوں میں شامل ہے ۔ ڈپٹی کمشنر آف پولیس ( ٹریفک II ) اے وی رنگناتھ نے قبل ازیں کہا کہ شکایت کی نوعیت کی اساس پر جیسے کہ ایک آٹو ڈرائیور کے ناشائستہ رویہ پر قریبی پٹرولنگ ویان کو چوکس کیا جائے گا ۔ چونکہ اس موبائیل ایپ کو اسمارٹ فونس پر انسٹال کیا گیا ہے ۔ اس لیے پٹرولنگ پارٹی شکایت کنندہ کے مقام سے واقف ہوگی اور وہ اس مقام پر پہنچ کر مسئلہ کو حل کریں گے ۔ ڈی سی پی رنگناتھ نے یہ بات بتائی ۔ انہوں نے کہا کہ شکایت کنندہ کی تفصیلات کو راز میں رکھا جائے گا ۔ ایس پرتاپ ، انسپکٹر ، ایچ ٹی پیز ، ٹریفک کمانڈ سنٹر نے کہا کہ مہم کو آٹو ڈرائیورس کے خلاف 30 شکایتیں موصول ہوئی ہیں جب لوگ شکایت کرتے ہیں تو فوٹو جس سے خلاف ورزی ظاہر ہو ، وقت ، مقام ، خلاف ورزی کا تذکرہ لازمی ہے ۔ شکایتیں ٹیکسیز ، آر ٹی سی بسیس ، اور سٹ ون بسوں کے ڈرائیورس کے خلاف حد سے زیادہ کرایہ لینے پر ، چھیڑ چھاڑ کرنے پر ، حالت نشہ میں ڈرائیونگ کرنے پر اور میٹر کے مطابق کرایہ نہ لینے پر درج کروائی جاسکتی ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT