Thursday , August 24 2017
Home / Top Stories / ٹرین میں مسلم جوڑے کے لگیج کی زبردستی تلاشی اور حملہ

ٹرین میں مسلم جوڑے کے لگیج کی زبردستی تلاشی اور حملہ

بیف رکھنے کے شبہ میں گاؤ رکھشا سمیتی کارکنوں کی اشتعال انگیزی

ہرڈا( مدھیہ پردیش ) ۔/15جنوری، ( سیاست ڈاٹ کام ) ایک ٹرین میں گوشت سے بھری تھیلی دستیاب ہونے کے بعد دائیں بازو کے کارکنوں نے لگیج ( ساز و سامان ) کی تلاشی کا اصرار کرتے ہوئے ایک مسلم جوڑے کو زدوکوب کردیا اور اس حملہ میں زخمی محمد حسین ( 43سال ) اور ان کی اہلیہ نسیم بانو (38 سال ) نے فی الفور اپنے رشتہ داروں کو یہ اطلاع دی جس کے بعد کھڑکیاریلوے اسٹیشن پر دونوں فریقوں میں تصادم ہوگیا۔ یہ واقعہ ہرڈا سے 30کلو میٹر دور پیش آیا۔ پولیس نے نسیم بانو کی شکایت پر گاؤ رکھشا سمیتی کے 2ارکان اور محمد حسین کے 9رشتہ داروں کو گرفتار کرلیا۔ زدوکوب کا واقعہ 13جنوری کو گورکھپور جانے والی خوشی نگر ایکسپریس میں پیش آیا۔ اس ٹرین کے جنرل کمپارٹمنٹ میں ایک لاوارث گوشت سے بھری تھیلی دستیاب ہوئی تھی۔ یہ ادعا کرتے ہوئے کہ اس تھیلی میں بیف پایا گیا ، 10تا15 افراد نے اچانک مسافرین کے لگیج کی تلاشی شروع کردی جوکہ حیدرآباد سے واپسی کے دوران کھنڈوا ریلوے اسٹیشن پر سوار ہوئے تھے۔ تاہم مسلم جوڑے نے یہ شکایت کی کہ گائے کا گوشت ساتھ رکھنے کا عذر پیش کرتے ہوئے ان کے لگیج کی زبردستی تلاشی لی گئی جس پر بعض مسافرین نے احتجاج بھی کیا۔ نسیم بانو نے الزام عائد کیا کہ ان پر اور ان کے شوہر پر حملہ بھی کردیا گیا تاہم ایک پولیس کانسٹبل سنجے بنکا نے انہیں بچالیا اور جب یہ ٹرین کھرکیا اسٹیشن پر توقف کی تھی

اپنے رشتہ داروں کو موبائیل فون پر اس واقعہ کی اطلاع دی، یہ رشتہ دار ریلوے اسٹیشن پہنچتے ہی دائیں بازو کے ہندو کارکنوں کے ساتھ بحث و تکرار ہوگئی۔ لیکن پولیس نے فی الفور مداخلت کرتے ہوئے حالات پر قابو پالیا۔ ضلع ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ پولیس کمرن لتا نے آج یہ اطلاع دی اور بتایا کہ اس واقعہ کے سلسلہ میں پولیس نے ہندو تنظیم گاؤ رکھشا سمیتی کے 2 ارکان ہیمنت راجپوت اور سنتوش کو گرفتار کرلیا ہے جنہوں نے محمد حسین اور نسیم بانو کو زدوکوب کیا تھا۔جبکہ مزید 3حملہ آوروں کی تلاش جاری ہے۔ علاوہ ازیں ہیمنت کی شکایت پر حسین کے 9رشتہ داروں کو گرفتار کرلیا اور عدالت میں ضمانت کی منظوری کے بعد رہا کردیا گیا۔ دریں اثناء گورنمنٹ ریلوے پولیس نے ٹرین میں بھینس کے گوشت کی دستیابی پر 2 نامعلوم افراد کے خلاف ایک کیس درج کرلیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT