Thursday , September 21 2017
Home / کھیل کی خبریں / ٹوئنٹی 20 کرکٹ نئے اسٹروکس پر اکساتی ہے:ولیمسن

ٹوئنٹی 20 کرکٹ نئے اسٹروکس پر اکساتی ہے:ولیمسن

 

کنگسٹن۔23 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام )کیریبین پریمیئر لیگ کھیلنے میں مصروف نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن نے کہا ہے کہ ٹی ٹوئنٹی کرکٹ نئے شاٹس کی تلاش پر اکساتی ہے کیونکہ ٹسٹ کرکٹ کھیلتے ہوئے بعض اسٹروکس کھیلنے کا خیال بھی نہیں آتا ہے۔ کین ولیمسن نے ٹی ٹوئنٹی کو کرکٹ میں سب سے زیادہ اجتماعی کارکردگی سے جڑا کھیل قرار دیتے ہوئے کہا کہ انہیں اس طرز کی کرکٹ کھیلنے میں کوئی پریشانی درپیش نہیں کیونکہ انہیں ماحول کے اعتبار سے خود کو ہم آہنگ کرنا پڑتا ہے اور جو بھی موزوں انداز سے کھیل کے ساتھ ہم آہنگ ہوجائے اسے مشکل پیش نہیں آتی اور ہر کھلاڑی کا اپنا ایک انداز اور علیحدہ طاقت ہوتی ہے لیکن مختصر کرکٹ میں اسے میدان میں ایسی جگہ تلاش کرنی پڑتی ہے جہاں اسٹروکس کھیل کر وہ اسٹرائیک ریٹ کو بہتر بنا سکے۔ کین ولیمسن کے مطابق ٹی ٹوئنٹی تیز رفتار کرکٹ ہے جس سے اسی فطرت کے ساتھ ہم آہنگ ہونا پڑتا ہے اور میدان میں اتر کر نئے شاٹس کی تلاش کرنا پڑتی ہے جس میں لیپ اور ریورس سوئپ جیسے شاٹس بھی شامل ہیں اور حقیقت یہی ہے کہ ٹسٹ کرکٹ کھیلتے ہوئے اس طرح کے اسٹروکس کھیلنے کا خیال بھی نہیں آتا ہے۔ کپتان نے مزید کہا کہ عام طور پر اس طرز کی کرکٹ میں پاور ہٹرز کو کامیاب سمجھا جاتا ہے لیکن اس کے ساتھ ہی کچھ روایتی کرکٹ کھیلنے والے بیٹسمین بھی کامیاب ہیں۔انہوں نے سری لنکا کے مہیلا جے وردنے کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ ان کا کھیل لاجواب ہے جبکہ چند اور کھلاڑی بھی کامیابی کے ساتھ ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کھیل رہے ہیں جنہیں پاور ہٹرز نہیں سمجھا جاتا ہے۔یادر رہے کہ ولیمسن کو ٹسٹ اور ونڈے کے بہترین بیٹسمینوں میں شمار کیا جاتا تھا لیکن انہوں نے ٹوئنٹی 20 کرکٹ میں بھی خود کومنوایا ہے۔

TOPPOPULARRECENT