Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹو وہیلر گاڑی کے لیے فور وہیلر چالان کی رسید

ٹو وہیلر گاڑی کے لیے فور وہیلر چالان کی رسید

جرمانہ کی رقم ادائیگی تک گاڑی ضبط، فرینڈلی پولیسنگ کی پالیسی پر عمل ندارد
محمد علیم الدین
حیدرآباد 13 جنوری ۔ جدید ٹیکنالوجی کا استعمال دوستانہ ماحول کو فروغ دینے کی کوشش اور فرینڈلی پولیسنگ کی پالیسی ایسا لگتا ہے کہ صرف اعلیٰ عہدیداروں کے بیانات کی حد تک ہی محدود ہوگئی ہے؟ چونکہ سائبرآباد ٹریفک پولیس سے عوام کو آئے دن ایک نئی شکل سے ہراسانی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ بغیر رقم کے جرمانہ پالیسی سے کافی حد تک راحت تو حاصل ہوئی لیکن جب اس کی ادائیگی کے لئے جو حکمت عملی اختیار کی جارہی ہے وہ یقینا شہریوں کے لئے ناقابل بیان تکلیف دہ عمل ہے۔ جرمانوں کی ادائیگی کے لئے سختی تو ایک عمل ہے لیکن جرمانوں کی وصولی میں کسی اور کسی سزا کسی اور کو یہ عمل کہاں تک درست ہے۔ لیکن سائبرآباد ٹریفک پولیس کے لئے یہ عمل معمولی نظر آتا ہے۔ انھیں صرف جرمانوں کی وصولی سے مطلب ہے شہری کی تکلیف اور اس کے مسائل سے انھیں کوئی پرواہ نہیں۔ ایسا لگتا ہے کہ سائبرآباد کا ٹریفک پولیس عملہ فرینڈ لی پولیسنگ کا مطلب جانتا ہی نہیں۔ یا پھر انھیں اسی فرینڈلی پولیسنگ پر عمل آوری سے باز رکھا گیا ہے۔ ایک ایسا ہی واقعہ آج راجندر نگر کے علاقہ میں پیش آیا جہاں ٹو وہیلر گاڑی کو چلان کے بعد اسے فور وہیلر گاڑی کے چالان کی سلپ تھمادی گئی اور جرمانہ ادا کرنے تک اُسی کی ٹو وہیلر گاڑی کو ضبط کرلیا گیا۔ جرمانہ سلپ تھمانے والے عہدیدار سے جب اس شہری نے استفسار کیا تو اس سب انسپکٹر سطح کے عہدیدار نے شہری کی بات سننے سے انکار کردیا اور جھڑکتے ہوئے اسے چالان ادا کرنے کے لئے کہا۔ آفس کو جانے میں تاخیر کے خوف سے پریشان اس شہری نے سب انسپکٹر ٹریفک پولیس کی جانب سے دی گئی جرمانوں کی رسید کو حاصل کرلیا اور اسے ادا بھی کردیا۔ جرمانہ ادا کرنے کے بعد حاصل شدہ رسید کو دیکھنے کے بعد جو فور وہیلر کی تھی اس شہری کو اس کی موٹر سیکل حوالے کردی گئی۔ انصاری روڈ میر عالم ٹینک علاقہ کے ساکن ایک شہری کے ساتھ یہ واقعہ پیش آیا۔

یہ شخص پروفیسر جے شنکر اگریکلچرل یونیورسٹی راجندر نگر میں آؤٹ سورسنگ کی بنیاد پر کام کرتا ہے۔ وہ اپنے روزانہ کے معمول کی طرح ملازمت کیلئے دفتر جارہا تھے کہ ان کی موٹر سیکل کو روک دیا گیا اور دستاویزات طلب کئے گئے۔ اس شہری کے پاس پولیوشن اور انشورنس نہیں تھا اور عہدیدار نے جرمانہ عائد کردیا۔ تاہم جب جرمانہ کی رسید اس شہری کے ہاتھ لگی تو وہ حیرت میں پڑ گیا اور اس نے سب انسپکٹر ٹریفک پولیس مسٹر وینکٹیش سے کہاکہ یہ تو فور وہیلر ایک کار اور وہ بھی کیاب کے نمبر کی سلپ ہے۔ عہدیدار نے جھڑک کر چالان ادا کرنے کے لئے کہا اور اس شہری کی موٹر سیکل کو ضبط کرلیا۔ جبکہ اس شہری نے اپنی موٹر سیکل پر ای چالانات کی جانچ کی تو حیدرآباد حدود میں تین چالانات مالا کنٹہ، چارمینار اور ایل گیٹ کے مقامات پر چالان کیا گیا۔ تعجب کی بات یہ ہے کہ حیدرآباد میں ای چالان موٹر سیکل پر ہے اور موٹر سیکل جب سائبرآباد میں داخل ہوتی ہے تو فور وہیلر گاڑی بن جاتی ہے۔ سائبرآباد پولیس کے لئے یہ کوئی نئی بات نہیں۔ قبل ازیں گچی باؤلی کے علاقہ میں ٹی آر نمبر پر موجود گاڑی کے دستاویزات کی جانچ کئے بغیر گاڑی پر جرمانہ عائد کیا گیا اور اس گاڑی کو چھوڑ دیا گیا تھا۔ اس بات پر ایک پریس کانفرنس کے دوران سوال پر کمشنر اور ٹریفک کے ڈی سی پی کا بھی اطمینان بخش جواب نہیں تھا۔ ایسا عمل خود پولیس کے اعلیٰ عہدیداروں کے لئے بھی لمحہ فکر بن گیا ہے۔ نئی ٹیکنالوجی کے استعمال کے باوجود اور فرینڈلی پولیسنگ کی پالیسی پر عمل آوری کے لئے زور دینے کے بعد بھی عوام سے تکالیف کی شکایتیں حاصل ہورہی ہیں۔ پولیس کے اعلیٰ عہدیداروں کو چاہئے کہ وہ عملہ کی کارکردگی اور اقدامات پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے عوام کو سہولت فراہم کرے۔
تلنگانہ میں سردی کی لہر
حیدرآباد۔/13جنوری، ( سیاست نیوز) آندھرا پردیش اور تلنگانہ میں آئندہ 48 گھنٹوں کے دوران موسم خشک رہے گا جبکہ تلنگانہ میں شدید سردی کی لہر چل رہی ہے ۔ عادل آباد میں سب سے کم درجہ حرارت 13ڈگری ریکارڈ کیا گیا ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق ساحلی آندھرا، رائلسیما اور تلنگانہ میں آئندہ چند دن تک موسم خشک رہے گا اور سردی کی لہر برقرار رہے گی۔ شہر حیدرآباد میں بھی شدید سردی محسوس کی جارہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT