Monday , September 25 2017
Home / سیاسیات / ٹکٹوں کی تقسیم پر اترکھنڈ کے بی جے پی قائدین میں ناراضگی

ٹکٹوں کی تقسیم پر اترکھنڈ کے بی جے پی قائدین میں ناراضگی

کانگریس سے انحراف کرکے آنے والے تمام قائدین کو ٹکٹ دئے گئے ‘ سینئر قائدین نظر انداز
دہرہ دون 17 جنوری ( سیاست ڈاٹ کام ) اترکھنڈ میں 15 فبروری کو ہونے والے اسمبلی انتخابات کیلئے اب جبکہ بی جے پی نے کانگریس سے اپنی صفوں میں آئے تمام قائدین کو ٹکٹ دیدیا ہے تو پارٹی کے بااعتبار قائدین میں ناراضگی پیدا ہوگئی ہے ۔ ان سینئر قائدین کو ٹکٹ سے محروم کرتے ہوئے کانگریس سے آنے والے قائدین کو ٹکٹ دیا گیا ہے ۔ کہا گیا ہے کہ کم از کم 20 نشستیں ایسی ہیں جہاں پارٹی ٹکٹ کے طاقتور دعویداروں کو مایوسی ہوئی ہے جس کے بعد یہ اندیشے پیدا ہوگئے ہیں کہ ان میں سے کچھ قائدین آزاد امیدوار کی حیثیت سے مقابلہ کرسکتے ہیں جس سے پارٹی امیدواروں کے امکانات متاثر ہونگے ۔ حالانکہ مایوسی کا شکار بیشتر دعویداروں نے ابھی اپنے عزائم کا اظہار نہیں کیا ہے لیکن وہ سر عام اپنی ناراضگی ظاہر کرنے سے گریز نہیں کر رہے ہیں۔ کانگریس سے بی جے پی میں شامل ہونے والے سبودھ اونیال کو نریندر نگر سے امیدوار بنایا گیا ہے ۔ ایسے میں سابق رکن اسمبلی بی جے پی کے اوم گوپال راوت کو مایوسی ہوئی ہے ۔ وہ اس حلقہ سے انتخاب لڑنے کی مسلسل تیاریاں کر رہے تھے ۔ انہوں نے اعلان کردیا ہے کہ وہ یہاں سے آزاد امیدوار کے طور پر مقابلہ کرینگے ۔ کہا گیا ہے کہ ایسے تقریبا تمام حلقوں میں بی جے پی کارکنوں میں ناراضگی ہے جہاں سے کانگریس کے باغیوں کو بی جے پی امیدوار بنایا گیا ہے ۔ سابق رکن اسمبلی آشے نوتیال کو کیدارناتھ سے ٹکٹ کی امید تھی اور وہ اس بات سے ناراض ہیں کہ یہاں سے کانگریس سے بغاوت کرنے والی شیلا رانی راوت کو بی جے پی نے ٹکٹ دیدیا ہے ۔ اسی طرح سابق رکن اسمبلی سریش چند جین رورکی میں ناراض ہیں جہاں سے پرادیپ بترا کو پارٹی امیدوار بنادیا گیا ہے ۔ اسی طرح سابق رکن اسمبلی شیلیندر سنگھ راوت کو کوٹ دوار میں مایوسی کا سامنا کرنا پڑا ہے کیونکہ یہاں سے کانگریس سے بی جے پی میں آنے والے ہارک سنگھ راوت کو ٹکٹ دیدیا گیا ہے ۔ رورکی میں سریش چند جین نے کہا کہ وہ محسوس کر رہے ہیں کہ پارٹی نے انہیں دھوکہ دیا ہے اور وہ بھی یقینی طور پر حلقہ کی ترقی کیلئے انتخابی مقابلہ کرینگے ۔ بی جے پی نے کچھ موجودہ ارکان اسمبلی کو بھی ٹکٹ نہیں دیا ہے ۔ ان میں یمکیشور کے رکن اسمبلی وجئے برتھوال اور چوبتاخل کے رکن اسمبلی و سابق صدر پردیش بی جے پی تیرتھ سنگھ راوت بھی شامل ہیں۔ چوبتاخل سے پارٹی نے سابق چیف منسٹر و رکن پارلیمنٹ بی سی کھنڈوری کی دختر ریتو کھنڈوری کو ٹکٹ دیا گیا ہے جبکہ مسٹر تیرتھ کو نظر انداز کرتے ہوئے کانگریس کے باغی امریتا راوت کے شوہر ستپال مہاراج کو ٹکٹ دیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT