Thursday , August 17 2017
Home / کھیل کی خبریں / ٹیم انتخاب، مصباح الحق اور سلیکٹروں میں اختلافات

ٹیم انتخاب، مصباح الحق اور سلیکٹروں میں اختلافات

کراچی ۔19 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام )پاکستان کے سابق چیف سلیکٹرز کے بعد مصباح الحق موجودہ چیف سلیکٹر ہارون رشید سے بھی خوش نہیں ہیں۔ اس بات کے واضح اشارے مل رہے ہیں کہ من پسند کھلاڑیوں کو منتخب نہ کرنے پر پاکستان ٹیم انتظامیہ اور سلیکشن کمیٹی میں ٹھن گئی ہے اور دونوں ایک سمت  نہیں ہیں۔ ماضی میں مصباح الحق کے چیف سلیکٹرز اقبال قاسم اور معین خان کے ساتھ بھی کئی کھلاڑیوں پر اختلافات سامنے آچکے ہیں۔ ورلڈ کپ میں مصباح اور وقار یونس ، اوپنر ناصر جمشید کا معاملہ غیر ضروری طور پرلڑتے رہے۔ ورلڈ کپ میں وکٹ کیپر سرفراز احمد کو کئی مقابلوں میں باہر بٹھایا گیا۔ اقبال قاسم کے دور میں مصباح الحق نے شاہد آفریدی کو خارج کروایا اور عمر اکمل سے زبردستی وکٹ کیپنگ کروائی گئی۔انگلش ٹیم کے خلاف رواں سیریز میں  یاسر شاہ کے ان فٹ ہونے اور ظفر گوہر کی بروقت نہ پہنچنے پر کپتان مصباح الحق اور کوچ وقار یونس سلیکٹرز سے ناراض ہیں۔ مصباح اور وقار یونس ٹسٹ ٹیم میں فواد عالم اور جنید خان کو شامل کرنے پر پہلے ہی خوش نہیں تھے۔ زمبابوے میں ونڈے سیریز سے قبل مصباح الحق نے بلال آصف کو ونڈے ٹیم میں شامل کرنے کی درخواست کی تھی۔ ذرائع کے بموجب جب بلال کا ایکشن رپورٹ ہوا تو مصباح الحق نے شعیب ملک کو یاسر شاہ کے ساتھ تیسرے اسپنر کے طور پر شامل کرنے کی درخواست کی۔ شعیب ملک کئی برسوں سے بیٹنگ پر توجہ دے رہے ہیں اور بولنگ کم کرتے ہیں۔نیز  ابوظہبی ٹسٹ سے قبل اچانک یاسر شاہ کمر کی تکلیف میں مبتلا ہوئے تو ٹیم انتظامیہ نے پہلی درخواست سیالکوٹ کے لیگ اسپنر اسامہ میر کو دبئی بھیجنے کی درخواست کی۔ اسامہ میر کو دو فرسٹ کلاس میچوں کا تجربہ ہے اور آخری فرسٹ کلاس میچ میں انہوں نے چار اوورز کئے تھے اس لئے سلیکٹرز نے ٹیم انتظامیہ کی درخواست ردکردی۔ سلیکٹر نے  اسپنر ظفر گوہر کو بھیجنے کا فیصلہ کیا۔ ذرائع نے کہا ہیکہ انگلینڈ کے خلاف ٹسٹ اسکواڈ تشکیل دیتے وقت ایک بیٹسمین کا انتخاب تنازعہ کا سبب بنا تھا۔

TOPPOPULARRECENT