Friday , September 22 2017
Home / Top Stories / ٹیکس دہندگان کی تعداد کو 10 کروڑ تک پہونچانے کی ہدایت

ٹیکس دہندگان کی تعداد کو 10 کروڑ تک پہونچانے کی ہدایت

موجودہ تعداد دوگنی کی جائے ۔ ٹیکس چوری کرنے والے قانون کے لمبے ہاتھوں سے ڈریں۔ وزیر اعظم نریندر مودی کا خطاب

نئی دہلی 16 جون ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیر اعظم نریندر مودی نے آج ٹیکس عملہ کیلئے نشانہ مقرر کرتے ہوئے کہا کہ وہ ٹیکس دہندگان کی تعداد کو دوگنی کرتے ہوئے 10 کروڑ تک پہونچائیں۔ انہوں نے ساتھ ہی خبردار کیا کہ جو لوگ ٹیکس چوری کرتے ہیں قانون کے لمبے ہاتھ انہیں پکڑ لیں گے ۔ ساتھ ہی وزیر اعظم نے محکمہ ٹیکس کے عہدیداروں سے کہا کہ وہ اپنے رویہ میں نرمی اور تدبر پیدا کریں اور ہر کسی کو ٹیکس چوری کرنے والا نہ سمجھیں۔ ٹیکس منتظمین کی دو روزہ سالانہ کانفرنس کے افتتاحی سشن سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ انتظامیہ کی بنیاد پانچ ستونوں مالیہ ‘ احتساب ‘ تحقیق ‘ اطلاعات اور ڈیجیٹائزیشن پر ہونی چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ تمام شہریوں میں قانون کا احترام ہونا چاہئے اور جو لوگ ٹیکس چوری کرتے ہیں انہیں قانون کے لمبے ہاتھوں سے خوف محسوس ہونا چاہئے ۔ یہ واضح کرتے ہوئے کہ عوام میں ٹیکس منتظمین کا کوئی خوف نہیں ہونا چاہئے وزیر اعظم نے کہا کہ ہندوستانی عوام موروثی اعتبار سے دیانتدار ہیں اور انہوں نے ٹیکس محکمہ کے عملہ سے کہا کہ وہ اعتماد کا رابطہ پیدا کریں تاکہ ٹیکس وصولی کے نشانوں کی تکمیل ہوسکے ۔ اس کانفرنس کو راجسوا گیان سنگم کا نام دیا گیا ہے ۔

نریندر مودی نے اپنے خطاب میں عہدیداروں سے کہا کہ وہ محکمہ میں ڈیجیٹائزیشن کی سمت پیشرفت کریں تاکہ انتظامیہ کو موثر بنایا جاسکے اور اعتماد کی کمی کا جو مسئلہ ہے اسے حل کیا جاسکے ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ٹیکس دہندگان کو ٹیکس ادا کرتے ہوئے کوئی مسئلہ درپیش نہیں ہونا چاہئے اور منتظمین کو چاہئے کہ وہ تعاون والا رویہ اختیار کریں۔ انہوں نے کہا کہ عملہ کو چاہئے کہ وہ عوام میں جذبہ پیدا کرنے والا رویہ اختیار کریں نہ کہ انہیں خوفزدہ کرنے والا ۔ حکام کو یہ نہیں سمجھ لینا چاہئے کہ ہر کوئی ٹیکس چوری کرنے والا ہے ۔ سکریٹری مال ہسمکھ اڈیہ نے وزیر اعظم مودی نے کانفرنس میں یہ کہتے ہوئے حوالہ دیا ۔ ٹیکس عملہ کو اپنے لئے اعلی معیارات اختیار کرنے کا مشورہ دیتے ہوئیمودی نے کہا کہ حقیقت میں ہمیں یہ امید کرنی چاہئے کہ ٹیکس دہندگان کی موجودہ تعداد 5.43 کروڑ سے بڑھ کر دوگنی یعنی 10 کروڑ ہونی چاہئے ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ محکمہ کو چاہئے کہ وہ اپنی کارکردگی کومزید موثر بنائے اور یہاں خیالات کو عملی شکل دی جانی چاہئے ۔ معیشتم یںکالے دھن کی پیداوار پر مودی نے اس خیال کا اظہارکیا کہ غیر قانونی دولت رکھنے والے لوگ بہت کم ہیں اور اگر قوانین کو نرم کردیا جائے تو ٹیکس از خود جمع ہونا شروع ہوجائیگا ۔ وزیراعظم نے موجودہ نظام میں پائی جانے والی خامیوںکا بھی اس موقع پر تذکرہ کیا اور انہیں دور کرنے پر زور دیا ۔

TOPPOPULARRECENT