Thursday , October 19 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس اقلیتی قائدین کا اجلاس ، کرنسی نوٹوں کی تبدیلی پر قائدین متحرک

ٹی آر ایس اقلیتی قائدین کا اجلاس ، کرنسی نوٹوں کی تبدیلی پر قائدین متحرک

مختلف خبروں پر کیڈر میں ہلچل ، نامزد عہدوں میں تاخیر پر بے چینی ، مسلم قائدین چیف منسٹر سے ملاقات کے منتظر
حیدرآباد ۔ 21۔  نومبر  (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی سے تعلق رکھنے والے مسلم عوامی نمائندوں کا اجلاس منعقد ہوا  جس میں تازہ ترین سیاسی صورتحال اور نامزد عہدوں پر تقررات میں تاخیر کے سبب پارٹی کارکنوں میں پائی جانے والی ناراضگی کا جائزہ لیا گیا۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کی قیامگاہ پر یہ اجلاس منعقد ہوا جس میں رکن اسمبلی عامر شکیل کے علاوہ ارکان قانون ساز کونسل محمد فاروق حسین ، محمد سلیم اور محمد فریدالدین نے شرکت کی ۔ اگرچہ اس اجلاس کی تفصیلات کا میڈیا سے افشاء نہیں کیا گیا تاہم بتایا جاتا ہے کہ مسلم عوامی نمائندوں نے کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کے مسئلہ پر اخبارات میں شائع ہونے والی خبروں کا جائزہ لیا ۔ کرنسی نوٹ کی تنسیخ اور کرنسی کی تبدیلی کے سلسلہ میں برسر اقتدار پارٹی سے وابستہ اہم قائدین کے بارے میں خبروں کی اشاعت کا جائزہ لیتے ہوئے مسلم عوامی نمائندوں نے ان خبروں کے اثرات پر غور و خوض کیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ بڑے پیمانہ پر کرنسی نوٹ کی تبدیلی کے سلسلہ میں جس طرح سیاستداں متحرک ہوچکے ہیں، ان میں برسر اقتدار پارٹی کے قائدین بھی شامل ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ مختلف اخبارات میں شائع ہونے والی خبروں نے ٹی آر ایس کیڈر میں ہلچل پیدا کردی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ اس اجلاس میں نامزد عہدوں پر تقررات میں تاخیر کا مسئلہ بھی چھایا رہا ۔ اقلیتی اداروں پر تقررات کا عمل وقفہ وقفہ سے طوالت اختیار کر رہا ہے ، جس کے باعث کیڈر میں بے چینی بڑھتی جارہی ہے ۔ گزشتہ دو برسوں میں کئی مرتبہ تقررات کا عمل نقطہ عروج پر پہنچ چکا تھا، تاہم اچانک پھر کسی نہ کسی بہانے اسے ٹال دیا گیا ۔ گزشتہ دنوں دیپاولی کے موقع پر تقررات کی تیاری کی گئی لیکن کرنسی نوٹ کے بحران کے باعث چیف منسٹر نے اس معاملہ کو پھر ایک بار ٹالنے کا فیصلہ کیا ہے۔ نامزد عہدوں کیلئے سینکڑوں ٹی آر ایس قائدین اور کارکن منتظر ہیں اور تقررات کیلئے عوامی نمائندوں پر دن بہ دن دباؤ بڑھتا جارہا ہے ۔ ٹی آر ایس کے عوامی نمائندوں نے اس سلسلہ میں چیف منسٹر سے نمائندگی کا فیصلہ کیا ہے تاکہ اقلیتوں میں پائی جانے والی بے چینی کو دور کیا جاسکے۔ اجلاس میں شریک عوامی نمائندے اگرچہ اجلاس کی تفصیلات بتانے سے گریز کر رہے ہیں ، تاہم باوثوق ذرائع نے بتایا کہ چیف منسٹر کی نئی دہلی واپسی کے بعد مسلم قائدین ملاقات کی تیاری کر رہے ہیں۔ چیف منسٹر کے علاوہ وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ اور وزیر آبپاشی ہریش راؤ سے بھی نمائندگی کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT