Sunday , April 30 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس حکومت موافق غریب حکومت : وزیر فینانس ایٹالہ راجندر

ٹی آر ایس حکومت موافق غریب حکومت : وزیر فینانس ایٹالہ راجندر

کمزور طبقات اور اقلیتوں کے غریب خاندانوں کو جاری کردہ سبسیڈی کے اعداد و شمار مایوس کن
حیدرآباد ۔ 18 ۔ جنوری (سیاست نیوز) وزیر فینانس ای راجندر نے دعویٰ کیا کہ ٹی آر ایس حکومت موافق غریب حکومت ہے لیکن اسمبلی میں حکومت کی جانب سے کمزور طبقات اور اقلیتوں کے غریب خاندانوں کو سبسیڈی کی اجرائی سے متعلق پیش کردہ اعداد و شمار مایوس کن ہے ۔ ایس سی ، ایس ٹی ، بی سی اور اقلیتوں کو کارپوریشنوں کے ذریعہ خود روزگار اسکیم کے تحت قرض اور سبسیڈی کی منظوری کے سلسلہ میں حکومت کو اپوزیشن کی تنقیدوں کا سامنا کرنا پڑا ۔ وزیر فینانس نے اعتراف کیا کہ گزشتہ دو برسوں سے سبسیڈی کی رقم مکمل طور پر جاری نہیں کی گئی، جس کے باعث جاریہ سال اسکیم کا آغاز نہیں ہوسکا۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس دور حکومت میں غریبوں کی بھلائی کو یکسر نظر انداز کر دیا گیا تھا جبکہ ٹی آر ایس حکومت نے گزشتہ دو برسوں میں سبسیڈی کی جو رقم جاری کی ہے ، وہ کانگریس کے 10 سالہ دور کی رقم سے زیادہ ہے ۔ 2004 ء سے 2014 ء تک کانگریس حکومت نے 372 کروڑ روپئے بطور سبسیڈی جاری کئے تھے۔ تلنگانہ ریاست کے قیام کے بعد 2014-15 ء میں 322 اور 2015-16 ء میں 745 کروڑ روپئے بطور سبسیڈی جاری کئے گئے۔ اس طرح صرف دو برسوں میں 1402 کروڑ روپئے کمزور طبقات اور اقلیتوں کو بطور سبسیڈی جاری کئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کمزور طبقات سے معذرت خواہی کانگریس کو کرنی چاہئے جس نے ان کی بھلائی کی فکر نہیں کی تھی ۔

انہوں نے کہا کہ کانگریس دور حکومت میں سبسیڈی 30 فیصد دی جاتی تھی لیکن ٹی آر ایس حکومت نے اس رقم کو 80 فیصد تک کیا ہے اور 5 تا 10 لاکھ روپئے تک کے قرض فراہم کئے جارہے ہیں۔ غریب خاندان کو چھوٹے کاروبار کیلئے ایک لاکھ روپئے قرض پر 80 ہزار روپئے کی سبسیڈی کارپوریشن فراہم کر رہا ہے ۔ حکومت کے اعداد و شمار کے مطابق جون 2014 ء سے ایس سی ، ایس ٹی ، بی سی اور اقلیت کی جانب سے سبسیڈی کیلئے 5 لاکھ 7 ہزار 480 درخواستیں وصول ہوئی ہیں۔ اسکیم کے تحت اقلیتی بہبود کو 277کروڑ روپئے منظور کئے گئے جبکہ درج فہرست اقوام کے 2015 کروڑ ، درج فہرست قبائل کیلئے 189.89 کروڑ اور پسماندہ طبقات کیلئے 425.22 کروڑ روپئے منظور کئے گئے ہیں۔ ای راجندر نے بتایا کہ 2014-15 ء میں 8292 اقلیتی درخواست گزاروں کو 62.12 کروڑ روپئے کی سبسیڈی منظور کی گئی جبکہ 2015-16 ء میں 3541 امیدواروں کو 28.54 کروڑ روپئے کی سبسیڈی منظور کی گئی ہے ۔ کے وینکٹ ریڈی کانگریس نے الزام عائد کیا کہ حکومت کو سنہرے تلنگانہ اور سماجی تلنگانہ کی تشکیل سے کوئی دلچسپی نہیں اور اس کے اعلانات محض کاغذی ہیں۔ انہوں نے وزیر فینانس ای راجندر کو مشورہ دیا کہ وہ خود اس بات کا جائزہ لیں کہ حکومت کمزور طبقات کی بھلائی کیلئے کس حد تک سنجیدہ ہیں ۔ ومشی چندر ریڈی نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ تمام طبقات سے معذرت خواہی کرے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT