Friday , October 20 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس حکومت کی مقبولیت سے اپوزیشن بوکھلاہٹ کا شکار

ٹی آر ایس حکومت کی مقبولیت سے اپوزیشن بوکھلاہٹ کا شکار

حکمران پارٹی پر الزامات بے بنیاد ، وزیر برقی جگدیش ریڈی کا بیان
حیدرآباد ۔ 9۔ ڈسمبر (سیاست نیوز) وزیر برقی جگدیش ریڈی نے الزام عائد کیا کہ اپوزیشن جماعتیں ٹی آر ایس حکومت کی مقبولیت سے بوکھلاہٹ کا شکار ہوکر بے بنیاد الزامات عائد کر رہے ہیں۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے جگدیش ریڈی نے کہا کہ ورنگل لوک سبھا حلقہ کے ضمنی چناؤ میں ٹی آر ایس امیدوار کی شاندار کامیابی نے تلنگانہ عوام کی ٹی آر ایس حکومت سے اٹوٹ وابستگی کو ظاہر کردیا ہے ۔ اس نتیجہ کے بعد سے اپوزیشن جماعتیں بوکھلاہٹ کا شکار ہیں کیونکہ عوام نے انہیں بری طرح مسترد کردیا۔ جگدیش ریڈی نے کہا کہ ورنگل نتیجہ کا تسلسل مجالس مقامی کے کونسل انتخابات میں بھی دیکھنے کو ملے گا اور ٹی آر ایس امیدوار تمام 12 ایم ایل سی نشستوں پر کامیابی حاصل کریں گے ۔ دیگر جماعتوں سے تعلق رکھنے والے قائدین کی ٹی آر ایس میں شمولیت کا خیرمقدم کرتے ہوئے جگدیش ریڈی نے کہا کہ حکومت کی کارکردگی اور خاص طور پر ترقیاتی اور فلاحی اسکیمات سے متاثر ہوکر کانگریس اور  تلگو دیشم کے قائدین ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت یا پارٹی کی جانب سے اپوزیشن قائدین کو کوئی لالچ نہیں دیا جارہا ہے جس طرح کہ اپوزیشن الزام تراشی میں مصروف ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلگو دیشم اور کانگریس کے قائدین اپنے طور پر ٹی آر ایس میں شامل ہورہے ہیں اور آنے والے دنوں میں مزید قائدین کی شرکت متوقع ہے ۔ جگدیش ریڈی نے گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں ٹی آر ایس کی شاندار کامیابی کی پیش قیاسی کی ۔ انہوں نے کہا کہ شہر میں  حکومت کی جانب سے جو ترقیاتی کام شروع کئے گئے ہیں ، اس سے عوام کافی خوش ہیں۔ شہر کے کئی علاقوں میں غریبوں کیلئے ڈبل بیڈروم مکانات کی تعمیر کا آغاز کیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ورنگل کی طرح گریٹر حیدرآباد میں بھی ٹی آر ایس کو عوام کی زبردست تائید حاصل ہوگی اور کارپوریشن پر ٹی آر ایس کا قبضہ رہے گا ۔ انہوں نے کسی بھی جماعت کے ساتھ انتخابی مفاہمت کے امکانات کو مسترد کردیا۔

TOPPOPULARRECENT