Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس سے پانچ مسلم کارپوریٹرس منتخب، عوامی وفلاحی کام کرنے کا عزم

ٹی آر ایس سے پانچ مسلم کارپوریٹرس منتخب، عوامی وفلاحی کام کرنے کا عزم

چیف منسٹر کے سی آر سے اظہارتشکر، امیدواروں کی تلگو دانی سے پارٹی میں علحدہ شناخت
حیدرآباد۔/6فبروری، ( سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے ٹکٹ پر گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن میں مسلم اقلیت کے 5 امیدواروں نے کامیابی حاصل کی۔ پارٹی نے 150 رکنی کارپوریشن میں 24مسلم امیدواروں کو میدان میں اُتارا تھا۔ جن پانچ مسلم امیدواروں نے کامیابی حاصل کی ان میں محترمہ رشیدہ بیگم ( چنتل ) فصیح الدین بابا ( بورا بنڈہ ) حمید پٹیل ( کونڈہ پور ) محمد عبدالشفیع ( رحمت نگر ) اور محترمہ صبیحہ بیگم ( الہ پور ) شامل ہیں۔ پارٹی کے حلقوں میں مسلم امیدواروں کی کامیابی پر مسرت کا اظہار کیا جارہا ہے۔ قطب اللہ پور اسمبلی حلقہ کے تحت کونڈہ پور بلدی وارڈ سے کامیاب محترمہ رشیدہ بیگم کے شوہر محمد رفیع، قطب اللہ پور ڈیویژن کے ٹی آر ایس صدر ہیں، وہ گزشتہ تین برسوں سے پارٹی سے وابستہ ہیں اور اپنی حرکیاتی شخصیت کے باعث وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ سے قربت رکھتے ہیں۔ کے ٹی آر نے ان کی اہلیہ کو پارٹی ٹکٹ کے الاٹمنٹ میں اہم رول ادا کیا ہے۔ قطب اللہ پور اسمبلی حلقہ کی نمائندگی تلگودیشم رکن اسمبلی کرتے ہیں اور اس حلقہ کے تحت 8 بلدی ڈیویژنس ہیں اور ان تمام میں ٹی آر ایس نے کامیابی حاصل کی۔ محمد رفیع اور منتخب کارپوریٹر رشیدہ بیگم نے ’ سیاست‘ سے بات چیت کرتے ہوئے صدر ٹی آر ایس کے چندر شیکھر راؤ اور کے ٹی آر سے اظہار تشکر کیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ خالص عوامی خدمت کے جذبہ سے انتخابی میدان میں آئے ہیں اور وہ دن رات عوامی مسائل کی یکسوئی کیلئے محنت کریں گے۔ محترمہ رشیدہ بیگم نے 5ہزار سے زائد ووٹوں کی اکثریت سے کامیابی حاصل کی جس پر انہوں نے بارگاہ خداوندی میں سجدہ شکر ادا کیا۔ اس حلقہ میں رائے دہندوں کی تعداد تقریباً 42ہزار ہے اور مسلم اقلیت کے رائے دہندوں کی کم تعداد کے باوجود بھاری اکثریت سے کامیابی تمام طبقات میں محمد رفیع کی مقبولیت کو ظاہر کرتی ہے۔ محمد رفیع قطب اللہ پور حلقہ میں پارٹی کے استحکام میں اہم رول ادا کرچکے ہیں۔ رشیدہ بیگم نے تلگودیشم امیدوار کو شکست دے کر کامیابی حاصل کی۔ انہوں نے رائے دہندوں سے اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی فلاحی اسکیمات کے سبب عوام نے ٹی آر ایس کو شاندار کامیابی سے ہمکنار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی کامیابی دراصل سیکولر رائے دہندوں کی کامیابی ہے۔ رائے دہندوں نے بلالحاظ مذہب و ملت ٹی آر ایس کے حق میں ووٹ دیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ ہمیشہ غریب اور محنت کش طبقہ کے مسائل کی یکسوئی کیلئے اقدامات کریں گی۔ ان کے شوہر محمد رفیع عوامی مسائل کی یکسوئی میں کافی متحرک رہے ہیں۔ انتخابی مہم کے دوران کے ٹی راما راؤ نے نہ صرف ریالی میں حصہ لیا بلکہ وہ انتخابی مہم کے بارے میں روزانہ رپورٹ حاصل کرتے رہے۔ چنتل بلدی ڈیویژن میں پانی کی قلت اہم مسئلہ ہے اور چیف منسٹر نے حال ہی میں اس علاقہ کیلئے ایک ذخیرہ آب کی تعمیر کا آغاز کیا۔ کام کی تکمیل کے بعد پانی کی قلت کا مسئلہ مستقل طور پر حل ہوجائیگا۔ محمد رفیع نے بتایا کہ وہ علاقہ میں اردو میڈیم جونیر کالج کے قیام کے اقدامات کریں گے۔ علاقہ میں اردو میڈیم طلبہ کیلئے جونیر کالج کی عدم موجودگی کے سبب طالبات کو ایس ایس سی کے بعد تعلیم ترک کرنے پر مجبور ہونا پڑرہا ہے جبکہ طلبہ دور دراز کے علاقوں کا سفر کرنے پر مجبور ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے تیقن دیا کہ وہ ڈپٹی چیف منسٹر وزیر تعلیم کڈیم سری ہری سے نمائندگی کرتے ہوئے جونیر کالج کی منظوری حاصل کریں گے۔ محمد رفیع تلگو اور اردو پر یکساں عبور رکھتے ہیں اور تلگودانی کے سبب ٹی آر ایس حلقوں میں ان کی علحدہ شناخت ہے۔ رشیدہ بیگم نے کہا کہ چیف منسٹر کی ہدایت کے مطابق وہ عوامی مسائل کی یکسوئی کیلئے ہمیشہ دستیاب رہیں گے اور چنتل ڈیویژن کو مثالی حلقہ میں تبدیل کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT