Monday , August 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ٹی آر ایس قائدین کو اقتدار کا نشہ

ٹی آر ایس قائدین کو اقتدار کا نشہ

نظام آباد ۔ 7 ۔ جنوری ( پریس نوٹ ) قاضی سید ارشد پاشاہ سرکاری ترجمان تلنگانہ پردیش کانگریس نے برسراقتدار جماعت کے مختلف قائدین کی جانب سے کانگریس کے قائدین پر اہانت آمیز بیانات جاری کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ٹی آر ایس کے قائدین اقتدار کے نشہ میں دھت بے سروپا الزامات عائد کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ایم ایل سی کے حالیہ الیکشن میں کانگریس امیدوار وینکٹ رمنا ریڈی کو سنہری جال ڈال کر لمحہ آخر میں دستبردار کروایا گیا ۔ اس طرح ٹی آر ایس امیدوار بلامقابلہ فاتح قرار دیا گیا تھا ۔ منحرف امیدوار کے ذریعہ کانگریس اپوزیشن لیڈر محمد علی شبیر پر بے سروپا الزامات اور دو کروڑ روپئے کی وصولی کے الزامات عائد کئے گئے ہیں ۔ ہر سیاسی پارٹی سے تعلق رکھنے والے قائدین کو ٹی آر ایس کی منظم سازش سے بخوبی واقفیت ہے اب منحرف امیدوار الیکشن کمیشن سے رجوع ہونے کے ڈھونگ کررہا ہے ۔ قاضی سید ارشد پاشاہ نے ان حرکتوں کو غیرسیاسی غیرجمہوری اور شرمناک قرار دیا ۔ اب ریاستی وزیر کمرشیل ٹیکس حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کی 100 نشستوں پر الیکشن میں کامیاب ہونے کے دعوے کررہے ہیں ۔ قاضی سید ارشد پاشاہ نے ریاستی وزیر سرینواس یادو کے اس دعوی کو مضحکہ خیز قرار دیا کہ ٹی آر ایس کو کسی بھی جماعت سے مفاہمت کرنے کی ضرورت نہیں ہے یہ تو آنے والا وقت ہی بتائے گا کہ عظیم تر شہر حیدرآباد کے بلدی انتخابات میں نتائج کس نوعیت ہوں گے ۔ مسلم اقلیت کو تعلیم اور روزگار میں 12 فیصد تحفظات کا انتظار ہے ۔ مہنگائی دن بدن بڑھتی جارہی ہے ۔ بے روزگاری میں آئے دن اضافہ ہوتا جارہا ہے لیکن برسراقتدارحکومت کے سربراہ اور ان کے رفقا اپنی ناکامیوں پر پردہ ڈالنے کیلئے نت نئے دعوی کررہے ہیں ۔ وعدوں کے ذریعہ کے سی آر حکومت عوام سے کھلواڑہ کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT