Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس لیجسلیچر و پارلیمانی پارٹی کا 18مارچ کو اجلاس

ٹی آر ایس لیجسلیچر و پارلیمانی پارٹی کا 18مارچ کو اجلاس

عوامی مسائل کے علاوہ پارٹی کے استحکام سے متعلق مباحث کا امکان
حیدرآباد۔ 16 ۔ مارچ ( سیاست نیوز) ٹی آر ایس لیجسلیچر پارٹی اور پارلیمانی پارٹی کا اجلاس 18 مارچ کو 3.00 بجے دن تلنگانہ بھون میں طلب کیا گیا ہے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے یہ اجلاس طلب کیا جس میں عوامی مسائل کے علاوہ پارٹی استحکام پر مباحث کا امکان ہے۔ ٹی آر ایس رکن اسمبلی پی راجیشور ریڈی نے آج میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا  کہ حکومت کی جانب سے شروع کی گئی مختلف فلاحی اور ترقیاتی اسکیمات پر عمل آوری کا جائزہ لیا جائے گا ۔ اسکیمات کے فوائد عوام تک پہنچانے کیلئے ارکان پارلیمنٹ و اسمبلی سے تجاویز طلب کی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ کلیان لکشمی اسکیم کو بی سی طبقہ سے تعلق رکھنے والے تمام گروپس تک توسیع دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے، جس سے بڑی تعداد میں غریب بی سی خاندانوں کو فائدہ ہوگا۔ کلیان لکشمی اسکیم ایس سی ، ایس ٹی طبقات کے علاوہ اب بی سی طبقہ کے تمام سفید راشن کارڈ ہولڈرس کو فائدہ ہوگا۔ حکومت نے اقلیتی طبقہ کے طلباء کیلئے 70 اقامتی اسکولس کے قیام کا فیصلہ کیا ہے ۔ جاریہ تعلیمی سال سے ان اسکولس کا آغاز ہوگا۔ انگلش میڈیم زیر تعلیم کے یہ اسکولس تمام 10 اضلاع میں قائم کئے جارہے ہیں۔ پہلے سال اس اسکیم کیلئے حکومت نے 350 کروڑ روپئے مختص کئے ہیں۔ آبپاشی شعبہ کے لئے 25 ہزار کروڑ اور محکمہ صحت کیلئے 1000 کروڑ روپئے بجٹ میں مختص کئے گئے۔ انہوں نے کہا کہ ورنگل ، کھمم کارپوریشنوں اور دیگر بلدیات کی ترقی کیلئے خصوصی فنڈس الاٹ کئے جائیں گے۔ حکومت نے برہمن طبقہ کی بھلائی کیلئے 100 کروڑ روپئے مختص کئے ہیں۔ لیجسلیچر پارٹی اجلاس میں بجٹ کے اہم فیصلوں اور مباحث ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ فلاحی اسکیمات کے بارے میں عوامی نمائندوں سے تجاویز حاصل کی جائیں گی ۔ اجلاس میں ریاست کی خشک سالی صورتحال ، اسمبلی اور کونسل اجلاس کے روداد اور 27 اپریل کو ٹی آر ایس کی یوم تاسیس پر بھی مشاورت کی جائے گی ۔ یوم تاسیس پروگرام بڑے پیمانہ پر منعقد کیا جائے گا۔ راجیشور ریڈی نے کہا کہ پارٹی کے استحکام اور رکنیت سازی بھی مباحث کا موضوع رہیں گے۔

TOPPOPULARRECENT