Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس کی تاریخ ساز کامیابی پر عوام سے چیف منسٹر کا اظہار تشکر

ٹی آر ایس کی تاریخ ساز کامیابی پر عوام سے چیف منسٹر کا اظہار تشکر

حیدرآباد کی ترقی کے وعدے کو پورا کرنے کا عزم ، حکومت پر مزید ذمہ داری عائد
حیدرآباد /5 فروری (سیاست نیوز) چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ نے مکمل اکثریت کے ساتھ ٹی آر ایس کو تاریخ ساز کامیابی سے ہمکنار کرنے پر جی ایچ ایم سی کے عوام سے اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا کہ اس کامیابی کے بعد ٹی آر ایس اور حکومت پر مزید ذمہ داری بڑھ گئی ہے۔ آج گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے نتائج کے اعلان کے بعد ٹی آر ایس بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ گریٹر حیدرآباد کے عوام نے بلدی انتخابات میں ٹی آر ایس پر مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے میئر اور ڈپٹی میئر کے لئے مکمل اکثریت فراہم کی ہے۔ انھوں نے کہا کہ ماضی میں صرف 52 بلدی ڈیویژنس پر کامیابی حاصل کرنے کسی ایک جماعت کو اعزاز حاصل تھا، جب کہ عوام نے تمام ریکارڈس توڑ دیئے۔ انھوں نے کہا کہ یہ کامیابی پارٹی کی جدوجہد سے زیادہ پارٹی کے حق میں عوام کی پسندیدگی کا اظہار ہے۔ انھوں نے پارٹی کی کامیابی کے لئے کام کرنے والے وزراء، ارکان اسمبلی، ارکان پارلیمنٹ، پارٹی قائدین اور کیڈر سے اظہار تشکر کرتے ہوئے انھیں مشورہ دیا کہ بھاری اکثریت سے کامیابی پر تکبر میں ہرگز نہ مبتلا ہوں، بلکہ خدمت کے جذبہ کے تحت عوام کے درمیان رہیں۔ انھوں نے کہا کہ پارٹی قائدین سے مشاورت کے بعد ایک دو دن میئر اور ڈپٹی کے ناموں کو قطعیت دی جائے گی۔ انھوں نے کہا کہ غریب عوام کا ایجنڈا، ٹی آر ایس کا ایجنڈا ہوگا۔ حکومت کی جانب سے حیدرآباد کے عوام کے لئے ایک لاکھ ڈبل بیڈ روم فلیٹس کی تعمیر کے لئے بجٹ مختص کیا جائے گا۔ انھوں نے کہا کہ حیدرآباد میں رہنے والے عوام فرزندان تلنگانہ ہیں، جن کا تحفظ اور ترقی و بہبود حکومت کی ذمہ داری ہے، جب کہ پانی کی قلت دور کرنے کے لئے دو بڑے ذخائر آب تعمیر کئے جائیں گے۔ انھوں نے شہر حیدرآباد کو بلاوقفہ برقی سربراہی کے ذریعہ ممبئی کی طرح ہمیشہ جاگتے رہنے والے شہر میں تبدیل کرنے کا عزم ظاہر کیا اور لاء اینڈ آرڈر پر کوئی سمجھوتہ نہ کرنے کا اعلان کیا۔ انھوں نے ٹریفک مسائل حل کرنے کے لئے اسکائی وے ملٹی لیول فلائی اوورس اور سگنل فری سڑکوں کی تعمیر کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ شہر کے عوام کے لئے صرف عثمانیہ اور گاندھی ہاسپٹلس سرکاری ہیں، جب کہ حکومت کارپوریٹ طرز پر مزید دو نئے ہاسپٹلس تعمیر کرکے عوام کو طبی سہولت مفت فراہم کرے گی اور کنگ کوٹھی ہاسپٹل کو عصری سہولتوں سے ہم آہنگ کرکے ایک ہزار بستر کے ہاسپٹل میں تبدیل کرے گی۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ٹی آر ایس کے حق میں عوامی رائے کو ملحوظ رکھتے ہوئے اپوزیشن جماعتیں تنقید برائے تنقید کی پالیسی سے انحراف کرکے حکومت کو مفید اور صحت مند تجاویز پیش کریں۔ انھوں نے کہا کہ ورنگل لوک سبھا کے ضمنی انتخاب میں اپوزیشن جماعتوں نے تنقید برائے تنقید کی تھی، جس کی وجہ سے عوام نے ان کی ضمانتیں ضبط کرادیں، لہذا جی ایچ ایم سی انتخابات کے نتائج کے بعد انھیں سبق سیکھنا چاہئے۔ معاون ارکان کے مسئلہ پر آرڈیننس جاری کرنے کے بارے میں پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے انھوں نے کہا کہ یہ کوئی پہلی مرتبہ نہیں ہوا ہے، بلکہ ماضی میں اس طرح کی کئی مثالیں موجود ہیں۔ انھوں نے کہا کہ عوام نے ٹی آر ایس کو اتنی بھاری اکثریت سے کامیابی دلائی ہے کہ اسے اب کسی معاون رکن کی بھی ضرورت نہیں ہے۔

TOPPOPULARRECENT