Sunday , June 25 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس کی رکنیت سازی مہم کا عنقریب آغاز

ٹی آر ایس کی رکنیت سازی مہم کا عنقریب آغاز

حیدرآباد 13فروری (یواین آئی ) تلنگانہ کی حکمراں جماعت ٹی آر ایس کی رکنیت سازی مہم کا عنقریب آغاز ہوگا جس کیلئے منصوبہ تیار کرنے میں پارٹی کے اہم لیڈر مصروف ہیں۔ کارکنوں کی فلاح و بہبود کیلئے ٹھوس منصوبے تیار کئے جارہے ہیں۔ رکنیت سازی میں اضافہ کیلئے انشورنس کی سہولت کارکنوں کو دینے کا ارادہ ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ اس ماہ کے اواخر یا پھر مارچ کے پہلے ہفتہ میں رکنیت سازی مہم کا آغاز ہوجائے گا ۔ پارٹی کو مستحکم کرنے سمیت کارکنوں کی فلاح و بہبود پر توجہ دی جائے گی ۔ رکنیت سازی مہم بڑے پیمانہ پر شروع کرنے کی توقع ہے ۔ ریاست میں تشکیل حکومت کے بعد کی گئی رکنیت سازی میں جن افراد کو کارکن بنایا گیا تھا ان کی مدت 31 جنوری کو ختم ہوگئی ہے ۔ اس کی تجدید کی جائے گی اور نئے کارکن بنائے جائیں گے ۔ اُس وقت کی گئی رکنیت سازی میں ریکارڈ سطح پر کارکن بنائے گئے تھے ۔ ان ہی خطوط پر رکنیت سازی کا پروگرام بڑے پیمانہ پر مکمل کرنے کی توقع ہے ۔ قبل ازیں حلقوں کی سطح پر 5 ہزار سرگرم کارکن اور 25 ہزار عام کارکن بنائے گئے تھے تاہم اس میں اضافہ کی کوششیں کی جائیں گی ۔ گزشتہ کی گئی رکنیت سازی مہم میں 50 لاکھ کارکن بنائے گئے تھے اس مرتبہ اس تعداد میں اضافہ کا نشانہ رکھا گیا ہے ۔ ریاستی سطح ‘ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کی سطح پر رکنیت سازی کیلئے اڈھاک کمیٹیاں قائم کرنے کاپروگرام تیار کیا گیا ہے اور کارکنوں کو انشورنس کی سہولت بھی دینے کا ارادہ ہے ۔ رکنیت سازی کی فیس 10 روپئے میں اضافہ کرتے ہوئے اسے 100 روپئے کرنے پر بھی غور کیا جارہا ہے تاہم اس مسئلہ پر ٹی آر ایس سربراہ و وزیر اعلی چندر شیکھر راؤ سے مشورہ کیا جائے گا اور ان کی ہدایت کے مطابق ہی رکنیت سازی کی فیس مقرر کی جائے گی ۔ گزشتہ کی گئی رکنیت سازی مہم میں 50 لاکھ کارکن بنائے گئے تھے اس مرتبہ اس تعداد میں اضافہ کا نشانہ رکھا گیا ہے ۔ ریاستی سطح ‘ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کی سطح پر رکنیت سازی کیلئے اڈھاک کمیٹیاں قائم کرنے کاپروگرام تیار کیا گیا ہے اور کارکنوں کو انشورنس کی سہولت بھی دینے کا ارادہ ہے ۔رکنیت سازی کی فیس 10 روپئے میں اضافہ کرتے ہوئے اسے 100 روپئے کرنے پر بھی غور کیا جارہا ہے تاہم اس مسئلہ پر ٹی آر ایس سربراہ و وزیر اعلی چندر شیکھر راؤ سے مشورہ کیا جائے گا اور ان کی ہدایت کے مطابق ہی رکنیت سازی کی فیس مقرر کی جائے گی ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT