Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس کے اقلیتی قائدین کی سرکاری عہدے حاصل کرنے دوڑ دھوپ

ٹی آر ایس کے اقلیتی قائدین کی سرکاری عہدے حاصل کرنے دوڑ دھوپ

تلنگانہ کے تمام اضلاع سے فہرست کی تیاری ، ارکان اسمبلی و کونسل کو ذمہ داریاں
حیدرآباد۔21 اگست (سیاست نیوز) تلنگانہ میں سرکاری عہدوں پر اقلیتی قائدین اور کارکنوں کے تقررات کے سلسلہ میں تمام اضلاع سے فہرستیں تیار کی جارہی ہیں اور اس سلسلہ میں ٹی آر ایس کے اقلیتی قائدین نے کافی دوڑدھوپ ہے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو نے پارٹی کے مسلم ارکان قانون ساز کونسل اور مختلف کارپوریشنوں کے صدرنشین کو ذمہ داری دی ہے کہ وہ اضلاع کا دورہ کرتے ہوئے سرگرم قائدین اور کارکنوں کی فہرست پیش کریں تاکہ عید الاضحی سے قبل سرکاری عہدوں پر تقررات کا آغاز کیا جاسکے۔ ارکان قانون ساز کونسل اور صدور نشین کو مختلف اضلاع کی ذمہ داری دی گئی ہے جہاں وہ متعلقہ وزیر، رکن پارلیمنٹ اور ارکان اسمبلی سے مشاورت کے ذریعہ فہرست تیار کریں گے۔ اس فہرست میں 2001ء یعنی پارٹی کے قیام سے سرگرم کارکنوں کو ترجیح دی جائے گی۔ گریٹر حیدرآباد کی ذمہ داری ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کو دی گئی ہے اور صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم، صدرنشین سیٹ ون عنایت علی باقری اور ڈپٹی میئر بابا فصیح الدین کو ان کی اعانت کی ہدایت دی گئی۔ بتایا جاتا ہے کہ تمام اضلاع میں فہرستوں کی تیاری کا کام جاری ہے اور اس میں شمولیت کے لیے پارٹی کے اقلیتی قائدین سرگرم ہوچکے ہیں۔ وزراء، ارکان پارلیمنٹ اور ارکان اسمبلی کی سفارش حاصل کرنے کے لیے قائدین میں دوڑدھوپ دیکھی جارہی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ ہر ضلع سے فہرست 23 اگست تک ڈپٹی چیف منسٹر کے پاس پیش کردی جائے اور وہ 24 اگست کو وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی کے ٹی راما رائو سے فہرست کے سلسلہ میں مشاورت کریں گے۔ قطعی ناموں کی منظوری چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو دیں گے۔ ذرائع نے بتایا کہ چیف منسٹر اقلیتی اداروں کے علاوہ عام زمرے کے اداروں میں بھی اقلیتی قائدین کو نمائندگی دینے کا منصوبہ رکھتے ہیں۔ ہر ضلع سے کم از کم تین اقلیتی قائدین کو کسی نہ کسی ادارے میں نمائندگی دی جائے گی۔ پارٹی کے قیام سے آج تک ہر ضلع میں اقلیتی قائدین کی تعداد میں بھی کافی اضافہ ہوا ہے۔ اس طرح سرکاری اداروں میں شمولیت کے خواہشمندوں اور عہدوں کی تعداد کو دیکھیں تو یہ کہنا پڑے گا کہ صورت حال ایک انار سو بیمار کی طرح ہے۔ چیف منسٹر عید الاضحی سے قبل تقررات کا عمل شروع کرنا چاہتے ہیں۔ ا ردو اکیڈیمی، حج کمیٹی، اقلیتی کمیشن کے علاوہ وہ انفارمیشن کمشنر کے عہدے پر مسلم اقلیت کے قائد کو نامزد کرنے پر غور کررہے ہیں۔ اس سلسلہ میں چیف منسٹر کے دفتر میں بعض ناموں پر غور و خوص جاری ہے۔

 

TOPPOPULARRECENT