Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / پالمور ۔ رنگاریڈی لفٹ اریگیشن پراجکٹ کی تعمیر پر روک لگانے کا مطالبہ

پالمور ۔ رنگاریڈی لفٹ اریگیشن پراجکٹ کی تعمیر پر روک لگانے کا مطالبہ

جگن موہن ریڈی کی گورنر سے ملاقات ، دیگر مسائل پر بھی یادداشتیں
حیدرآباد ۔ 17 ۔ فروری : ( سیاست نیوز) : صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی و قائد اپوزیشن آندھرا پردیش مسٹر جگن موہن ریڈی نے گورنر سے ملاقات کرتے ہوئے چار مسائل پر مشتمل ایک یادداشت پیش کی ۔ چیف منسٹر تلنگانہ سے سمجھوتہ کرتے ہوئے آندھرا پردیش کے مفادات کو نقصان پہونچانے کا چندرا بابو نائیڈو پر الزام عائد کیا ۔ بعد ازاں ارکان اسمبلی کے ساتھ میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے جگن موہن ریڈی نے گورنر سے ملاقات کرتے ہوئے چار مسائل پر مشتمل ایک یادداشت پیش کی ۔ چیف منسٹر تلنگانہ سے سمجھوتہ کرتے ہوئے آندھرا پردیش کے مفادات کو نقصان پہونچانے کا چندرا بابو نائیڈو پر الزام عائد کیا ۔ بعد ازاں ارکان اسمبلی کے ساتھ میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے جگن موہن ریڈی نے کہا کہ پالمور رنگاریڈی لفٹ ایگریشن پراجکٹ تعمیر کرنے کے لیے چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر نے ٹنڈرس طلب کیا ہے ۔ 90 ٹی ایم سی پانی کا رخ موڑنے سے رائلسیما صحرا میں تبدیل ہوجائے گا اور سری سیلم و ناگرجنا ساگر پراجکٹ میں پانی بہہ کر نہیں آئے گا ۔ اس پراجکٹ کی تعمیر کو روکنے کی گورنر سے اپیل کی گئی ہے ۔ اس پراجکٹ کی تعمیر کے خلاف مرکزی وزیر آبرسانی اوما بھارتی کو بھی مکتوب روانہ کیا گیا لیکن کوئی نتیجہ برآمد نہیں ہوا ۔ اس پراجکٹ کو تعمیر ہونے سے روکنے کی ذمہ داری چیف منسٹر آندھرا پردیش پر عائد ہوتی ہے ۔ تاہم ووٹ برائے نوٹ اور ٹیلی فون ٹیاپنگ معاملہ دونوں تلگو ریاستوں کے چیف منسٹرس چندرا بابو نائیڈو اور کے سی آر ایک دوسرے سے سمجھوتہ کرچکے ہیں ۔ جس کی وجہ سے چیف منسٹر آندھرا پردیش اس پراجکٹ کے خلاف کوئی آواز نہیں اٹھا رہے ہیں ۔ ووٹ برائے نوٹ معاملے میں کروڑہا روپئے کی لین دین کے دوران رنگے ہاتھوں پکڑے جانے کے بعد چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو نے آندھرا پردیش کے مفادات کو نظر انداز کردیا ہے ۔ ساتھ ہی ٹرائیبل اڈویزری کمیٹی تشکیل دینے کی گورنر سے نمائندگی کی گئی ہے ۔ چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو کی ہدایت پر وائی ایس آر کانگریس پارٹی کے قائدین کے خلاف عائد کردہ مقدمات سے دستبرداری اختیار کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے ۔ کاپو طبقہ کی میٹنگ کے دوران احتیاطی اقدامات کرنے میں ناکام ہونے والی تلگو دیشم حکومت پر واقعہ کو غلط انداز میں پیش کرنے کا الزام عائد کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT