Tuesday , October 24 2017
Home / شہر کی خبریں / پالیرو ضمنی انتخاب میں سرکاری مشنری کا بے جا استعمال

پالیرو ضمنی انتخاب میں سرکاری مشنری کا بے جا استعمال

انتخابی ضابطہ قواعد کی خلاف ورزی ، عوامی فیصلہ قبول ، ملو روی
حیدرآباد ۔ 19 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے پالیرو اسمبلی کے ضمنی انتخابات میں حکمران ٹی آر ایس کی جانب سے سرکاری مشنری کا بیجا استعمال کرتے ہوئے انتخابی ضوابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرتے ہوئے کامیابی حاصل کرنے کا الزام عائد کیا اور عوامی فیصلے کو قبول کرنے کا اعلان کیا ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نائب صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی مسٹر ملو روی نے کہا کہ اسمبلی حلقہ پالیرو میں کانگریس کے رکن اسمبلی کے انتقال کی وجہ سے ضمنی انتخاب منعقد ہوا ہے عوام میں آنجہانی رکن اسمبلی کی بیوہ کانگریس کی امیدوار سچترا ریڈی کے لیے کافی ہمدردی تھی ۔ تاہم روایت کا خاتمہ کرتے ہوئے انتخابی میدان میں اترنے والی حکمران ٹی آر ایس نے بڑے پیمانے پر بے قاعدگیاں کی ہیں ۔ سرکاری مشنری کا بیجا استعمال کیا گیا ۔ رائے دہندوں کو ڈرایا دھمکایا گیا ۔ دولت اور شراب کو پانی کی طرح بہاتے ہوئے بڑے پیمانے پر انتخابی ضوابطہ کی خلاف ورزی کی گئی ہے ۔ پولیس ٹی آر ایس ایجنٹ کی طرح کام کیا ہے ۔ کانگریس پارٹی نے الیکشن کمیشن کو ٹی آر ایس کی بے قاعدگیوں کے خلاف باربار توجہ دلائی ہے ۔ تاہم الیکشن کمیشن نے کوئی کارروائی نہیں کی ہے ۔ انتخابی بے قاعدگیاں کرتے ہوئے ٹی آر ایس نے کامیابی حاصل کی ہے ۔ کانگریس پارٹی کو عوام کا فیصلہ قبول ہے ۔ پارٹی کا اجلاس طلب کرتے ہوئے پارٹی کی شکست کا جائزہ لیا جائے گا ۔ مسٹر ملو روی نے کانگریس کے حق میں رائے دہی کرنے والے رائے دہندوں سے اظہار تشکر کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT