Wednesday , September 20 2017
Home / کھیل کی خبریں / پاکستانی اولمپین محمد عاشق سائیکلنگ ہیرو سے رکشاراں!

پاکستانی اولمپین محمد عاشق سائیکلنگ ہیرو سے رکشاراں!

لاہور ، 3 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) سابق اولمپین محمد عاشق روزانہ اپنی ٹروفیوں پر نظر ڈالتے ہیں جو انھوں نے پاکستان کیلئے کئی دہے قبل پُرشکوہ سائیکلنگ کریئر میں جیتے تھے۔ تاہم اب انھیں زمانہ کچھ اس طرح فراموش کرچکا ہے کہ وہ افسوس کے ساتھ کہتے ہیں کہ شاید اکثر لوگوں نے سمجھ لیا کہ وہ مرچکے ہیں۔ 81 سالہ سائیکلنگ ہیرو نے ڈبڈبائی آنکھوں کے ساتھ نیوز ایجنسی ’اے ایف پی‘ کو بتایا کہ میرے لئے اب یہ محض یادیں بن کر رہ گئی ہیں کہ میں نے سابق پاکستانی وزرائے اعظم، صدور، چیف ایگزیکٹیوز سے مصافحہ کیا ہے۔ ’’کیوں اور کیسے وہ سب نے مجھے فراموش کردیا، یہ میری سمجھ نہیں آیا ہے۔ ‘‘ انھوں نے 1960ء میں روم اور 1964ء میں ٹوکیو کے گیمز میں مسابقت کی اور اگرچہ اس سطح پر وہ تمغے نہیں جیت پائے لیکن انھیں پاکستان کا نیشنل ہیرو قرار دی گیا۔ جب اُن کا سائیکلنگ کریئر ختم ہوا تو اُن کے حالات بھی بگڑ گئے۔ حتیٰ کہ گزربسر کیلئے اب وہ رکشا چلانے پر مجبور ہیں۔ اُن کی بیوی کا انتقال ہوگیا اور چاروں بچے اُن کے ساتھ نہیں رہتے ہیں ۔ محمد عاشق اپنے بچوں پر منحصر ہونا بھی نہیں چاہتے۔

TOPPOPULARRECENT