Wednesday , September 20 2017
Home / پاکستان / پاکستانی سرزمین دہشت گردوں کے زیر استعمال نہ رہے

پاکستانی سرزمین دہشت گردوں کے زیر استعمال نہ رہے

امریکہ کے سنٹرل کمان کے جنرل جوزف اووٹل کا پاکستانی عہدیداروں کو مشورہ
اسلام آباد ۔ 20اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان کو اس بات کو یقینی بنانا چاہیئے کہ اُس کی سرزمین کسی بھی قسم کے پڑوسی ممالک پر دہشت گرد حملے کیلئے استعمال نہ کی جائے ۔ امریکہ کی مرکزی کمان کے کمانڈر جنرل جوزف اووٹل نے پاکستان کے عہدیداروں کو گذشتہ ہفتہ اپنے دورہ پاکستان کے موقع پر یہ پیغام دیا ۔ امریکی کمانڈر کا یہ تیسرا دورہ پاکستان تھا ۔ پاکستانی قیادت سے تبادلہ خیال کے دوران انہوں نے یقین ظاہر کیا کہ تمام فریقین اس بات کو یقینی بنائیں گے پاکستانیسرزمینپڑوسی ممالک پر دہشت گرد حملوں کے لئے یا اُن کی منصوبہ بندی کیلئے استعمال نہ کی جائے ۔ امریکی سفارت خانہ برائے پاکستان سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیاہے کہ جنرل اووٹل نے امریکہ اور پاکستان کی فوج کے مزید استحکام کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ دونوں ممالک کو چاہیئے کہ متحدہ طور پر اس بات کو یقینی بنائیں کہ دونوں کے درمیان علاقائی سلامتی اور استحکام کی خاطر عظیم تر تعاون جاری رہے ۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ جنرل کے اس دورہ سے ایک بار پھر انسداد دہشت گردی اور انسداد شورش پسندی کوششوں کے بارے میں زیادہ تفہیم پیدا ہوئی ہے ۔ حکومت پاکستان نے برسوں سے ہمارے مشترکہ مقاصد کیلئے جدوجہد کی ہے ۔ بیان کے بموجب کمانڈر اووٹل نے وزیراعظم پاکستان عباسی سے بھی ملاقات کی ۔ جس کے دوران وزیراعظم پاکستان نے مبینہ طور پر کہا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ پاکستان کا امن اور استحکام برائے افغانستان میں بہت کچھ داؤ پر لگاہ وا ہے ۔ کیونکہ پاکستان افغانستان میں تنازعات کی وجہ سے سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے ۔ وزیراعظم پاکستان عباسی نے کمانڈر اووٹل کے ساتھ ملاقات کے دوران کشمیر کے مسئلہ کو دوبارہ اٹھایا ۔ انہوں نے کہا کہ جنرل اووٹل قومی اور علاقائی اندیشوں کے مسائل کی یکسوئی کو اہمیت دیتے ہیں اور ان کی یکسوئی کیلئے مشترکہ طور پر جدوجہد کرتے رہیں گے ۔ پاکستانی سرزمین سے مختلف غیر سرکاری تنظیمیں ریاست جموں و کشمیر میں کارروائیاں کرتی رہتی ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT