Tuesday , September 26 2017
Home / ہندوستان / پاکستانی فوج نے پونچھ میں گھس کر دو ہندوستانی سپاہیوں کے سر قلم کردیا

پاکستانی فوج نے پونچھ میں گھس کر دو ہندوستانی سپاہیوں کے سر قلم کردیا

انتہائی غیرانسانی و بربریت انگیز واقعہ، جیٹلی کا ردعمل ، ناپاک حرکت کا منہ توڑ جواب دینے ہندوستانی فوج کا عہد
جموں ۔ یکم ؍ مئی (سیاست ڈاٹ کام) پاکستانی فوج کی خصوصی ٹیم نے مورٹار کی اندھادھند شلباری کی ڈھال میں لائن آف کنٹرول 250 میٹر تک سرحد عبور کرتے ہوئے جموں و کشمیر کے ضلع پونچھ میں ہندوستانی سیکوریٹی کے دو اہلکاروں کے سر قلم کردیا۔ وزیردفاع ارون جیٹلی نے دہلی میں کہا کہ دو شہید ہندوستانی سپاہیوں کی نعشوں کو مسخ کرنا ایک انتہائی مذموم اور بربریت انگیز واقعہ ہے۔ جیٹلی نے کہا کہ ہندوستانی فوج اس غیرانسانی حرکت کا مناسب جواب دے گی اور سپاہیوں کی یہ قرانی رائیگاں نہیں جائے گی۔ فوج نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہیکہ ان دونوں کی نعشیں مسخ کی گئی ہیں لیکن ایک سینئر فوجی عہدیدار نے پی ٹی آئی سے کہا کہ ان دونوں کے سر قلم کئے گئے ہیں۔ ہندوستانی فوج نے اس مذموم حرکت کے خلاف مناسب جوابی کارروائی کرنے کی وارننگ دی ہے۔ ہندوستانی فوج کی شمالی کمانڈ نے اپنے بیان میں کہا کہ ’’کرشنا گھاٹی سیکٹر میں لائن آف کنٹرول پر پاکستانی فوج نے دو سرحدی چوکیوں پر بلااشتعال راکٹ حملے کئے اور مورٹار فائرنگ کی گئی۔ (پاکستانی) بارڈر ایکشن ٹیم (بیٹ) نے بیک وقت کارروائی میں دونوں چوکیوں کے درمیان سرحدی مورچوں پر حملے کی۔ فوجی اصولوں کے مغائرکی گئی اس کارروائی میں ہمارے دو پٹرولنگ سپاہیوں کی نعشیں مسخ ہوگئیں‘‘۔ پاکستان کی بارڈر ایکشن ٹیم (بیٹ) جو بالعموم اپنے فوجی اہلکاروں اور دہشت گردوں پر مشتمل ہوا کرتی ہے، کرشنا گھاٹی میں شلباری کی ڈھال میں یہ حملہ کیا۔ ہندوستانی فوج نے اس کارروائی کا منہ توڑ جواب دینے کا عہد کی ہے۔ پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوا نے ایک دن قبل لائن آف کنٹرول کے چند علاقوں کا دورہ کرتے ہوئے کشمیریوں کی تائید کا وعدہ کیا تھا۔ پاکستان کی اس ناپاک حرکت میں مہلوک سپاہیوں کی شناخت 22 ویں سکھ اینفنٹری کے نائب صوبیدار پرمجیت سنگھ اور بی ایس ایف کی 200 ویں بٹالین کے ہیڈکانسٹیبل پریم ساگر کی حیثیت سے کی گئی ہے۔ بی ایس ایف کے ایک کانسٹیبل زخمی ہوئے ہیں تاہم ان کی حالت خطرہ سے باہر ہے۔ اطلاعات کے مطابق پاکستانی فوج کی 647 ویں مجاہد بٹالین نے آج صبح 08:25 بجے کرشنا گھاٹی سیکٹر میں ہندوستانی سرحدی چوکی ’’کرپان‘‘ کو اپنی (پاکستانی) چوکی پمپل سے حملے کا نشانہ بنایا جس کے ساتھ ہی اسی علاقہ کی دوسری چوکی کو بھی حملے کا نشانہ بنایا گیا۔ بی ایس ایف کے ایک سینئر افسر کے مطابق 08:30 بجے پاکستانی فوجی چوکی کی طرف سے بی ایس ایف چوکی پر بلااشتعال اندھادھند فائرنگ کی گئی۔ ہندوستانی فوج نے جواب دیا اور کچھ دیر تک بلاوقفہ فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا۔
پاکستان کی تردید
اسلام آباد سے موصولہ اطلاع کے بموجب پاکستانی فوج نے آج متنازعہ علاقے کشمیر میں لائن آف کنٹرول پر دو ہندوستانی فوجیوں کو ہلاک کرنے اور اُن کی لاشیں مسخ کرنے کے الزامات کی تردید کر دی۔ اس سے پہلے ہندوستان فوج نے کہا تھا کہ اُس کے دو فوجی پاکستانی فورسز کی طرف سے شروع کیے گئے ایک حملے میں ہلاک ہو گئے اور اُن کی مسخ لاشیں لائن آف کنٹرول پر پڑی ملی تھیں۔ پاکستانی فوج کی طرف سے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ لاشوں کو مسخ کرنے کا ہندوستانی فوج کا الزام غلط ہے اور پاکستان نے لائن آف کنٹرول پر فائر بندی کی کوئی خلاف ورزی نہیں کی۔

TOPPOPULARRECENT