Wednesday , September 20 2017
Home / دنیا / پاکستانی نژاد امریکی لڑکے کو دولت اسلامیہ سے تعلق کا جبری اعتراف کروایا گیا

پاکستانی نژاد امریکی لڑکے کو دولت اسلامیہ سے تعلق کا جبری اعتراف کروایا گیا

نیویارک ۔ 18 اگست (سیاست ڈاٹ کام) ایک 12 سالہ پاکستانی نژاد امریکی لڑکے کو خود اس کے اسکول میں اس بات کیلئے جبر کیا گیا کہ وہ ایک ایسے اقرارنامہ پر دستخط کرے جس میں یہ اعتراف کیا گیا ہوکہ اس کا تعلق دولت اسلامیہ سے ہے اور وہ اسکول کی دیوار کو دھماکے سے اڑا دینا چاہتا تھا۔ لڑکے کے خاندان کے ذریعہ 25 ملین امریکی ڈالرس کے ہرجانے کیلئے دائر کئے گئے مقدمہ کی عرضداشت میں یہ بات تحریر کی گئی ہے۔ لانگ آئی لینڈ میں رہنے والے مسلم خاندان نے ایسٹ ازلپ یونین فری اسکول ڈسٹرکٹ پر 25 ملین امریکی ڈالرس کے ہرجانے کا مقدمہ دائر کیا ہے جہاں یہ شکایت کی گئی ہے ان کے بیٹے نشوان اپل کو اس کے ہم جماعت دہشت گرد کہہ کر پکارتے تھے جس کے بعد اسکول انتظامیہ نے بھی اس سے بار بار یہی سوالات پوچھنے شروع کردیئے کہ کیا وہ بم بناتا ہے؟ کیا وہ اسامہ بن لادن کو جانتا ہے؟ کیا وہ دولت اسلامیہ کا حصہ ہے؟ یہی نہیں بلکہ جم میں ورزش کے دوران سپرنٹنڈنٹ، پرنسپل اور اسسٹنٹ پرنسپل نے بھی اسے ورزش کرنے کی اجازت نہیں دی اور سوالات پوچھنے لگے۔ جب اس نے نفی میں جواب دیا تو کوئی بھی اس کی بات کا یقین کرنے تیار نہیں تھا۔

TOPPOPULARRECENT