Sunday , August 20 2017
Home / کھیل کی خبریں / پاکستانی ٹیم میںکھلاڑیوں کے انتخاب میں من مانی کا الزام

پاکستانی ٹیم میںکھلاڑیوں کے انتخاب میں من مانی کا الزام

لاہور ۔11 اپریل (سیاست ڈاٹ کام )پاکستانی کر کٹ ٹیم کے سابق ہیڈ کوچ وقار یونس کی جانب سے ٹیم کی ایشیاء کپ اور ورلڈ  ٹوئنٹی20 ٹورنمنٹ  میں ناقص کارکردگی پر پی سی بی کو پیش کی گئی مکمل رپورٹ منظر عام پر آگئی۔ذرائع کے مطابق وقاریونس کی جائزہ رپورٹ میں  ٹیم کی سلیکشن کے بار ے میں بھی سنسنی خیزانکشافات کئے گئے ہیں اور کھلاڑیوں کی سلیکشن میں چیف سلیکٹر ہارون رشیدکی من مانیوں کا راز فاش کیا گیا ہے۔ جائزہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مختلف مواقع پر عمر اکمل ،احمد شہزاد ،یونس خان اور 39سالہ رفعت آ مہمند کو مخالفت کے باوجود چیف سلیکٹر نے منتخب کیا۔ سابق ہیڈ کوچ نے ہارون رشید کو اپنی رپورٹ میں مستقبل کے وژ ن سے مکمل طور پر عاری شخص قرار دیا۔تفصیلات کے مطابق پاکستانیکر کٹ ٹیم کی ایشیا ء کپ اور آئی سی سی ورلڈ کپ میں ناقص کارکردگی کے حوالے سے سابق ہیڈ کوچ وقار یونس کی جانب سے پی سی بی کو پیش کی گئی جائزہ رپورٹ کے مزید مندرجات سامنے آگئے ہیں۔رپورٹ میں سابق ہیڈ کوچ نے سابق چیف سلیکٹر ہارون رشید کی گرین شرٹس کی سلیکشن معاملات میں من مانیوں کا تذکرہ کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق رپورٹ میں سابق ہیڈ کوچ وقار یونس نے احمدشہزاد کوایک سیریزمیں خارج کر کے دوسری میں واپس بلا نے کی سخت مخالفت کی۔ انہوں نے کہا کہ عمراکمل کے ڈسپلن مسائل کے باوجود سابق چیف سلیکٹر ہارون رشید نے انہیں  ٹیم میں شامل کر نے کا غلط فیصلہ کیا۔ انہوں نے رپورٹ میں تجویز پیش کی تھی کہ عمراکمل کوسابق آسٹریلیائی آل راؤنڈراینڈریوسائمنڈزاور سابق انگلش بیٹسمین کیون پیٹرسن کی طرح مثالی سزادینی چاہئے۔ واضح رہے کہ ڈسپلن مسائل پر اپنے کرکٹ بورڈ ز کی جانب سے  ٹیم سے خارج ہونے کے بعد کیون پیٹرسن او ر اینڈریوسائمنڈزکودوبارہ بین الاقوامی میچز میں کبھی نہیں کھلایاگیا۔ جائزہ رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ ہارون رشیدنے ملکی میڈیا کے دباؤمیں آکر تجربہ کار بیٹسمین یونس خان کو گزشتہ سال نو مبر میں انگلینڈ کے خلاف ونڈے سیریز کیلئے منتخب کیا۔ سابق چیف سلیکٹرنے مستقبل کی فکر کئے بغیریونس خان کا غلط انتخاب کی جنہوں نے ونڈے ٹیم میں واپس آتے ہی اگلے میچ میں سبکدوشی اختیارکر لی۔ وقار یونس نے مزید کہا کہ ان کی جانب سے یونس خان کی ونڈے ٹیم میں انتخابکی بھرپور مخالفت کی گئی تھی۔ اسپاٹ فکسنگ پر سزا یافتہ سابق کپتان سلمان بٹ نے ڈومیسٹک کرکٹ میں کافی رنز کئے لہٰذاوہ آئی سی سی ورلڈ کپ کیلئے خرم منظور اوراحمدشہزادسے زیادہ بہترین کھلاڑی تھے۔ وقار یونس نے جائزہ رپورٹ میں کہا کہ سلمان بٹ کوبطوراوپنرواپس طلب کرنے کی تجویزدی لیکن سابق کپتان شاہدآفریدی اس معاملے پر رکاوٹ بن گئے۔ وقار یونسکی شدید مخالفت کے باوجود سلیکشن کمیٹی نے گزشتہ سال نومبر میں یو اے ای میں انگلینڈ کے خلاف  ٹوئنٹی20  سیریز کیلئے 39سالہ رفعت آمہمندکومنتخب کیا۔

TOPPOPULARRECENT