Saturday , September 23 2017
Home / کھیل کی خبریں / پاکستانی ٹیم کے ناقص مظاہرہ کیلئے کوچ وقار یونس ذمہ دار

پاکستانی ٹیم کے ناقص مظاہرہ کیلئے کوچ وقار یونس ذمہ دار

کھلاڑیوں یونس خان اور عبدالرزاق کی کھلی تنقید۔ کھلاڑیوں کو اعتماد سے محروم کرنے کا الزام
کراچی 13 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) سینئر پاکستانی کھلاڑیوں یونس خان اور عبدالرزاق نے حالیہ وقتوں میں ونڈے اور ٹی 20 کرکٹ میں پاکستانی ٹیم کے ناقص مظاہرہ کیلئے ہیڈ کوچ وقار یونس کو ذمہ دار قرار دیا ہے ۔ یونس خان نے کراچی میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وقار یونس پر تنقید کرنے میں احتیاط سے کام نہیں لیا ۔ انہوں نے کہا کہ وہ ٹیم میں غیر یقینی کیفیت پھیلا رہے ہیں۔ انہوں نے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ڈریسنگ روم میں خوف کا ماحول نہیں ہونا چاہئے ۔ جب کھلاڑیوں میں تحفظ کا احساس نہیں ہوگا تو وہ ملک کیلئے کس طرح کارکردگی دکھا سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کے خیال میں پاکستانی ٹیم کا کوچ کسی ایسے شخص کو ہونا چاہئے جو ٹیم کے کھلاڑیوں کو متحد رکھ سکے ۔

یونس خان نے کہا کہ ٹیم کی ناقص کارکردگی کی وجوہات یہ ہیں کہ کئی نوجوان کھلاڑیوں کو موقع دیا گیا ہے اور کسی بھی امتزاج کو سیٹ ہونے کا موقع نہیں ملا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایک ایسا وقت تھا جب پاکستان ٹی 20 کی ٹاپ ٹیم تھی لیکن جب اس کھیل میں تبدیلیاں آگئی ہیں اور ہر ٹیم اس کو سنجیدگی سے لے رہی ہے ۔ سابق کپتان محمد یوسف کی جانب سے پاکستان کیلئے بیرونی کوچ کی حمایت سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ کوچ چاہے مقامی ہو یا بیرونی ہو اسے سابق کوچ باب وولمر کی طرح ہونا چاہئے ۔ وولمر 2004 سے 2007 تک پاکستان کے کوچ رہے تھے ۔ وہ جمائیکا میں ورلڈ کپ کے دوران انتقال کر گئے تھے ۔ ٹی 20 کرکٹ سے ان کی اچانک سبکدوشی سے متعلق استفسار پر انہوں نے پھر وقار کو تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ اگر وہ کوچ ہوتے اور ان کی طرح وقار نے سبکدوشی اختیار کرلی ہوتی تو وہ خوش ہوتے کہ کم از کم کسی کے پاس ایسا فیصلہ کرنے کی صلاحیت تو ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان کے خیال میں اس فیصلے سے وقار کو خوشی ہوسکتی ہے اور انہیں سبکدوشی کے اپنے فیصلے پر کوئی افسوس نہیں ہے ۔ رزاق نے بھی اس خیال کا اظہار کیا کہ ناقص کارکردگی کیلئے کوچ ذمہ دار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر وہ کچھ کہیں توبورڈ سمجھے گا کہ ہم تنقیدیں کررہے ہیں لیکن بورڈ کو بھی یہ دیکھنے کی ضرورت ہے کہ حالیہ عرصہ میں کیا کچھ ہوا ہے اور غلطی کہاں ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کھلاڑیوں کو اعتماد اور احترام دینے کی ضرورت ہے اور اگر کسی کوچ سے ایسی امید نہیں کی جاسکتی ہے تو پھر آپ نتائج کی امید کس طرح رکھ سکتے ہیں ؟ ۔

بالوٹیلی کو یورو 2016 سے باہر کیا جاسکتا ہے
میلان 13 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) اطالوی کوچ انٹونیو کونٹے نے کہا کہ اسٹار اسٹرائیکر ماریو بالوٹیلی کو یورو 2016 کیلئے ٹیم سے باہر کیا جاسکتا ہے اور انہیں ٹی وی پر میچس کا مشاہدہ کرنا پڑسکتا ہے ۔ 25 سالہ اسٹرائیکر گذشتہ ایک سال سے اپنے ملک کیلئے نہیں کھیل سکے ہیں۔ یورو 2016 کیلئے اٹلی کے ساتھ گروپ میں بلجیم ‘ آئرلینڈ اور سویڈن ہیں۔ اپنے ٹوئیٹر بالوٹیلی نے کہا تھا کہ وہ اس ٹورنمنٹ کے آغاز کے شدت سے منتظر ہیں۔انہوں نے کہا کہ سب کھلاڑیوں کو اپنی صلاحیتوں کو منوانے کی ضرورت ہے اور بالوٹیلی بھی اس سے مختلف نہیں ہیں۔

TOPPOPULARRECENT