Tuesday , September 26 2017
Home / کھیل کی خبریں / پاکستان ، انگلینڈ کا آج سیریز میں فیصلہ کن چوتھا ونڈے

پاکستان ، انگلینڈ کا آج سیریز میں فیصلہ کن چوتھا ونڈے

اظہر علی زیرقیادت میزبانوں پر سیریز بچانے کیلئے دباؤ ۔ مورگن کی انگلش ٹیم کو 3-1 سے سیریز جیتنے کا موقع

دبئی ، 19 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان ونڈے انٹرنیشنل سیریزکا چوتھا و آخری میچ کل جمعہ کو یہاں کھیلا جائے گا۔ انگلینڈ کو سیریز میں 2-1 کی برتری حاصل ہے۔ چنانچہ ظاہر طور پر دباؤ اظہر علی زیرقیادت میزبانوں پر رہے گا۔ پاکستانیوں نے شارجہ میں کھیلے گئے تیسرے ونڈے میں مایوس کن بیٹنگ کا مظاہرہ کیا جبکہ 3 بیٹسمین رن آؤٹ ہوئے جس سے ٹیم بڑا اسکور کرنے میں ناکام رہی۔ اوئن مورگن کی انگلش ٹیم فیصلہ کن میچ جیت کر سیریز میں 3-1 کی کامیابی حاصل کرنے کوشاں ہوگی جبکہ پاکستان اس سیریز میں بہرحال 2-2 کا ڈرا نتیجہ چاہے گا۔ اس طرح یہ دن؍ رات کے ونڈے میں دلچسپ مسابقت کی توقع ہے، جبکہ ہندوستانی وقت کے مطابق سہ پہر 4-30 بجے میچ شروع ہوگا۔ اظہر علی کی قیادت میں پاکستانی ٹیم سیریز بچانے کی آخری کوشش کے طور پر میدان سنبھالے گی۔ پاکستان نے پہلا ونڈے چھ وکٹوں سے جیتنے کے بعد انگلینڈ کے خلاف دس سال میں پہلی ونڈے سیریز میں کامیابی کا موقع گنوا دیا اور انگلینڈ دوسرا ونڈے 95 رنز اور تیسرا میچ چھ وکٹوں سے جیت کر چار مقابلوں کی سیریز جیتنے کی پوزیشن میں آگیا ہے۔ گزشتہ دونوں میچوں میں پاکستانی بیٹسمنوں نے مایوس کن کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے، خاص کر تیسرے ونڈے میں  جس طرح اہم بیٹسمین رن آؤٹ ہوئے اس پر انھیں شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ واضح رہے کہ اس میچ میں پاکستان نے ایک موقع پر صرف دو وکٹوں کے نقصان پر 132 رنز بنا لئے تھے لیکن چھ وکٹیں اسکور میں صرف 29 رنز کے اضافے پر گرگئیں۔ کپتان اظہر اس سے قبل زمبابوے اور سری لنکا کے خلاف مسلسل تین ونڈے سیریز جیت چکے ہیں،

لیکن وہ اس سیریز میں زبردست دباؤ میں معلوم ہوتے ہیں جس کا ایک بڑا سبب ان کی اپنی خراب بیٹنگ فام ہے۔ تین میچوں میں وہ 8، 22 اور 36 رنز ہی اسکور کر سکے ہیں۔ ہیڈ کوچ وقار یونس کیلئے بھی صورتحال مایوس کن ہے جو ٹسٹ سیریز میں 2-0 کی جیت کے بعد ونڈے سیریز میں بھی اپنے کھلاڑیوں سے اچھی کارکردگی کی توقع رکھے ہوئے تھے۔ وقار بحیثیت کوچ آسٹریلیا، بنگلہ دیش اور سری لنکا کے خلاف بھی ٹسٹ سیریز جیت چکے ہیں لیکن اسی مدت میں انھیں آٹھ میں سے پانچ ونڈے سیریز میں شکست ہوئی ہے۔ مبصرین اس سیریز میں ان پر بہت زیادہ تجربے کرنے پر تنقید کررہے ہیں جبکہ کوچ وقار کا کہنا ہے کہ یہ تجربے ٹیم کو بہتر ترکیب  میں لانے کیلئے کئے جا رہے ہیں۔ اس سیریز میں پاکستانی ٹیم تین میچوں میں دو مختلف اوپننگ جوڑیوں کے ساتھ میدان میں اتری ہے۔ اظہر علی کے ساتھ بلال آصف اور بابر اعظم کسی بڑی شراکت کے بغیر اننگز کا آغاز کر چکے ہیں جبکہ ریگولر اوپنر احمد شہزاد اس ٹور پرپہلا موقع ملنے کے منتظر ہیں۔ وقار کا کہنا ہے کہ ٹیم کو چھٹے بولر کی ضرورت ہے، اس لئے شہزاد کو موقع نہیں مل سکا۔ خود شہزاد بھی حالیہ میچوں میں کوئی خاص کارکردگی کا مظاہرہ کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکے ہیں۔ آخری دس ونڈے اننگز میں وہ صرف دو نصف سنچریاں بنا پائے جبکہ آخری دس ٹی 20 اننگز میں ان کی صرف ایک نصف سنچری ہے۔ آل راؤنڈر شعیب ملک انگلینڈ کے خلاف پہلے ٹسٹ کی پہلی اننگز میں ڈبل سنچری کے بعد سے بُری طرح ناکام ہیں اور آٹھ اننگز میں صرف 102 رنز بنائے، جس میں سب سے بڑا اسکور 38 ہے۔

TOPPOPULARRECENT