Friday , September 22 2017
Home / دنیا / ’پاکستان ایک فرضی و جعلی جمہور یت ہے ‘

’پاکستان ایک فرضی و جعلی جمہور یت ہے ‘

لندن یونیورسٹی میں مذاکرہ، برطانوی امریکی ماہرین کا خطاب
لندن ۔ 18 اگست (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ اور برطانیہ کے سرکردہ ماہرین تعلیم نے کہا ہیکہ پاکستان ایک ’’فرضی وجعلی جمہوریت‘‘ ہے اور بالخصوص پناما دستاویزات کے مسئلہ پر سپریم کورٹ کی طرف سے وزیراعظم نواز شریف کی برطرفیکے بعد پہلے سے کہیں زیادہ ایسا محسوس ہونے لگا ہے۔ پانچ سرکردہ ماہرین تعلیم گذشتہ شام لندن یونیورسٹی میں ’’پاکستان میں جمہوریت کاا نحطاط اور مملکت کا رول‘‘ کے زیرعنوان ایک سمینار سے خطاب کررہے تھے۔ سپریم کورٹ کی پانچ رکنی بنچ نے پناما دستاویزات سے متعلق ایک مقدمہ میں نواز شریف کو بددیانت کا مرتکب قرار دیتے ہوئے کسی بھی عوامی عہدہ کیلئے نااہل قرار دیا تھا جس کے نتیجہ میں متحارب وزیراعظم کو عہدہ سے معزول ہونا پڑا تھا۔ چیاٹھام ہاوز سے وابستہ پاکستانی نژاد معاون نیلو فرزانہ شیخ نے پاکستان کو ’’بونسائی جمہوریت‘‘ ایسی مملکت قرار دیا جو خود اپنے ہی ماحول میں سکڑ جاتی ہے‘‘۔ اس فورم نے اپنے بیان میں کہا کہ ’’بالخصوص سپریم کورٹ کی جانب سے نواز شریف کی بیدخلی کے بعد اب یہ (فرضی و جعلی جمہوریت) پہلے سے زیادہ محسوس کی جانے لگی ہے‘‘۔ واشنگٹن کی جارج ٹاؤن یونیورسٹی کی معاون پروفیسر کرسٹین فیر نے نواز شریف کی معزولی کو عدلیہ کی بغاوت قرار دیا۔ فیر نے کہا کہ پاکستانی عدلیہ کو وہ آزادادارہ کے طور پر نہیں دیکھتیں لیکن اس ملک کی فوج اور سپریم کورٹ کے مابین پیدا شدہ یہ ایک نئی سازباز کا حصہ تھی۔ فیر نے کہا کہ جمہوریت کو پاکستان میںا پنی جڑیں پیوست کرنے سے روکنے کیلئے جمہوریت کے پودے کو تراش کر محدود کرنے کیلئے پاکستانی فوج کو ایک نئے اوزار کی ضرورت تھی چنانچہ اس نے سپریم کورٹ کا سہارا لیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT