Sunday , August 20 2017
Home / کھیل کی خبریں / پاکستان سیمی فائنل تک پہنچنے کا مستحق نہیں:وقار یونس

پاکستان سیمی فائنل تک پہنچنے کا مستحق نہیں:وقار یونس

موہالی۔24 مارچ (سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان کرکٹ ٹیم کے کوچ وقار یونس نے کہا ہے کہ ورلڈ کپ  ٹوئنٹی20  میں پاکستانی ٹیم کی کارکردگی  اتنی اچھی نہیں ہے اور پاکستان میگا ایونٹ کے سیمی فائنل تک پہنچنے کا مستحق نہیں۔ بنگلہ دیش کے خلاف کامیابی حاصل کرنے کے بعد پاکستان کو یکے بعد دیگرے روایتی حریف ہندوستان اور نیوزی لینڈ سے شکست کا سامنا کرنا پڑا، جس کے بعد ٹیم کے سیمی فائنل میں پہنچنے کے امکانات کم ہوگئے ہیں۔ نیوزی لینڈ سے شکست کے بعد وقار یونس نے بیٹسمینوں کو اس کا ذمہ دار ٹھہرایا جو ایک اچھا آغاز فراہم کرنے کے بعد نشانہ کے تعاقب میں ناکام رہے ۔پاکستان نے 181 رنز کے نشانہ کے تعاقب میں ابتدائی 5 اوورز میں 61 رنز بنائے جو شرجیل خان کے مرہون منت تھے جو 25 گیندوں پر 47 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے، تاہم بعد میں احمد شہزاد 32 گیندوں پر 30 رنز جبکہ عمر اکمل 26 گیندوں پر 24 رنز بناکر اس اچھے آغاز کو مستحکم رکھنے میں ناکام رہے۔ میچ کے بعد پریس کانفرنس میں وقار یونس نے افسردگی سے کہا اگر آپ دیکھیں تو ہم آٹھویں سے پندرھویں اوور میں بالکل بھی آگے نہیں بڑھے (یعنی رن ریٹ بہت سست  رہا)۔  ہمارے 2 نام نہاد نوجوان کرکٹرز، جنھیں درمیان میں کھیلنے کا موقع ملا، ہمارا خیال تھا کہ وہ کھیل کو آگے لے کر جائیں گے، ہماری صرف یہی امید تھی، لیکن ایسا نہیں ہوا۔ کوچ نے مزید کہا کہ میرا خیال ہے کہ جو پلیٹ فارم ہمیں چاہیے تھا،

وہ ہمیں مل گیا اور ہمیں یہ تسلیم کرنا چاہیے کہ کھلاڑیوں نے بولنگ بہتر کی، میچ کے درمیان میں ہمیں چوکوں چھکوں کا موقع نہیں ملا، جو اہم تھا، لیکن میرے خیال میں کارکردگی اتنی معیاری نہیں تھی۔ وقار یونس کے مطابق بیٹسمینوں کو وہی غلطیاں دہراتے ہوئے دیکھنا ‘بہت تکلیف دہ’ تھا، ‘میرا خیال ہے کہ کرکٹ بورڈ اورسلیکٹرز کو اب کارروائی کرنی چاہئے۔ جب ایک بیٹسمین  نے شکایت کی کہ اسے اْس کی خواہش کے مطابق مطلوبہ مقام  پر کھیلنے کا موقع نہیں دیا جارہا، اس حوالے سے کوچ نے کہا کہ  ٹوئنٹی20  ایک ایسا کھیل  ہے، جہاں کھلاڑیوں کو خود کو ہم آہنگ کرنا چاہئے اور حالات کے مطابق خود کو ڈھالنا چاہئے اوروہ جو اس بات کی شکایت کر رہے ہیں کہ انھیں ان کی مطلوبہ مقام  پر نہیں کھلایا گیا، ان کے لئے اْس وقت ایک اچھا موقع تھا جب شرجیل نے ایک اچھے آغاز کے ساتھ موقع بنا دیا تھا۔3 میچوں میں سے 2 میں شکست کے بعد پاکستان اب اس ٹورنمنٹ سے باہر ہی نظر آتا ہے لیکن وقار یونس نے کہا کہ وہ امید ہارنا نہیں چاہتے۔ انہوں نے کہا کہ ہم امید برقرار رکھیں گے لیکن جس قسم کی کرکٹ ہم کھیل رہے ہیں اور جس طرح کی کارکردگی ہم دکھا رہے ہیں، ہم اس کے مستحق نہیں ہیں۔ پاکستانی کپتان شاہد خان آفریدی کی کرکٹ سے سبکدوشیکے واضح اشارے کے حوالے سے وقار یونس نے کہا اس پر مجھے کیا کہنا چاہیے، یقینی طور پر انھوں نے پاکستان کے لئے کرکٹ نہ کھیلنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT