Wednesday , September 20 2017
Home / پاکستان / پاکستان سے روانگی کیلئے راحیل شریف سے مدد لینے کی تردید

پاکستان سے روانگی کیلئے راحیل شریف سے مدد لینے کی تردید

میں کسی سے رجوع نہیں ہوا تھا اور نہ ہی کوئی درخواست کی تھی : پرویز مشرف
اسلام آباد 27 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستاب کے سابق ڈکٹیٹر پرویز مشرف نے اپنے سابق موقف پر ’یو ٹرن‘ لیتے ہوئے کہا ہے کہ ملک سے باہر جانے کے لئے انھوں نے فوج کے سابق سربراہ جنرل راحیل شریف سے مدد نہیں لی تھی اور اصرار کے ساتھ کہاکہ اس ضمن میں ان کے بیان کو میڈیا نے مسخ کیا ہے۔ مشرف نے ایک ٹیلی ویژن چیانل کو دیئے گئے انٹرویو میں کہاکہ ’’کوئی بھی مجھ سے رجوع نہیں ہوا تھا اور نہ ہی میں کسی سے رجوع ہوا تھا۔ راحیل شریف نے کسی بھی موضوع پر مجھ سے تبادلہ خیال نہیں کیا تھا اور نہ ہی میں نے اُن سے کوئی درخواست کی تھی‘‘۔ انھوں نے کہاکہ گزشتہ ہفتہ دنیا نیوز کو دیئے گئے ان کے بیان کو میڈیا نے مسخ کرکے پیش کیا ہے۔ 73 سالہ پرویز مشرف نے دنیا نیوز کے ایک ٹاک شو میں کہا تھا کہ ’’ہاں ! انھوں (راحیل شریف) نے میری مدد کی تھی، میں بالکلیہ طور پر واضح اور احسان مند ہوں۔ میں ان (شریف) کا باس رہا ہوں اور ان سے پہلے فوج کا سربراہ رہا ہوں۔ انھوں نے مدد کی تھی کیوں کہ مقدمات کو سیاسی رنگ دیا جارہا تھا‘‘۔ قومی سیاست پر فوج کے اثر و رسوخ کے بارے میں ایک سوال پر مشرف نے گزشتہ روز کہا تھا کہ ’’پاکستان میں تمام ادارہ جات ایک دوسرے سے تعاون و رابطہ کے ساتھ کام کرتے ہیں۔ میں بھی فوج میں 40 سال خدمت کرچکا ہوں‘‘۔

TOPPOPULARRECENT