Friday , October 20 2017
Home / کھیل کی خبریں / پاکستان سے نہ کھیلنے پر سزا، بی سی سی آئی چراغ پا

پاکستان سے نہ کھیلنے پر سزا، بی سی سی آئی چراغ پا

ششانک منوہر زیرقیادت آئی سی سی نے ویمنس ٹیم کو چھ پوائنٹس سے محروم کردیا
نئی دہلی ، 23 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) انڈین کرکٹ بورڈ کے ششانک منوہر زیرقیادت آئی سی سی کے ساتھ تعلقات میں نئی پستی آگئی کیونکہ انڈین ویمنس کرکٹ ٹیم کو آئی سی سی ویمنس چمپئن شپ کے مطابق یکم اگسٹ تا 31 اکٹوبر کے درمیان پاکستان کے خلاف نہ کھیلنے کی پاداش میں چھ پوائنٹس سے محروم کردیا گیا ہے۔ ایسے امکانات پیدا ہوگئے ہیں کہ مینس ٹیم یہ جواز پیش کرتے ہوئے بطور ِ احتجاج چمپینس ٹروفی کھیلنے سے انکار کرسکتی ہے کہ قواعد و ضوابط کے نام پر خاتون کرکٹرز کو ’’آسان شکار‘‘ بنایا جارہا ہے۔ اس تبدیلی پر چراغ پا بی سی سی آئی نے عالمی ادارہ کے پاس احتجاج درج کرایا ہے، جو اچھی طرح جانتے ہیں کہ پاکستان کے خلاف کوئی باہمی سیریز کیلئے موجودہ سیاسی صورتحال کے تحت حکومتی اجازت درکار ہے، جس کے بارے میں آئی سی سی کے ہندوستانی چیئرمین بخوبی واقف ہیں۔ بی سی سی آئی کے برہم سینئر عہدہ دار نے آج نیوز ایجنسی ’پی ٹی آئی‘ کو بتایا کہ ’’آئی سی سی کو اچھی طرح معلوم ہے کہ موجودہ حالات میں جہاں ہندوستانی سپاہیوں کو شہید کیا جارہا ہے، پاکستان سے کھیلنے کے معاملے میں جذبات آڑے آرہے ہیں۔ چیئرمین بخوبی جانتے ہیں کہ ہمیں حکومتی اجازت درکار ہے۔‘‘ انھوں نے مزید کہا کہ یہ غلط مقصد کے ساتھ کیا گیا اقدام ہے جو پاکستان کے ہاتھوں کھلونا بننے کی کوشش کے مترادف ہے۔

 

وہ کہیں گے کہ اگر خواتین کھیل سکتی ہیں تو مرد (بھی) کھیل سکتے ہیں۔ لیکن ایسا فی الحقیقت ہوگا نہیں۔ ’’اگر آئی سی سی نے اپنا فیصلہ واپس نہ لیا تو مینس ٹیم ہماری ویمنس ٹیم کے ساتھ یگانگت کے طور پر چمپینس ٹروفی میں نہیں کھیلے گی۔‘‘ قبل ازیں آئی سی سی نے آج بتایا: ’’پی سی بی اور بی سی سی آئی دونوں کی طرف سے تحریری بیانات پر غور کرنے کے بعد آئی سی سی ٹیکنیکل کمیٹی نے رولنگ دی ہے کہ انڈیا ویمنس ٹیم نے آئی سی سی ویمنس چمپئن شپ کے راؤنڈ 6 میں پاکستان کے خلاف وہ تینوں میچز نہیں کھیلے جو انھیں کھیلنا چاہئے تھا، اور اس لئے متعلقہ پوائنٹس پاکستان کے حق میں کردینا چاہئے۔ چونکہ اِن دنوں پارلیمانی سیشن جاری ہے، اس لئے صدر بی سی سی آئی انوراگ ٹھاکر تبصرہ کیلئے دستیاب نہ ہوئے۔

TOPPOPULARRECENT