Wednesday , August 16 2017
Home / کھیل کی خبریں / پاکستان طویل عرصہ بعد آسٹریلیائی سرزمین پر کامیاب، دوسرا ونڈے جیتا

پاکستان طویل عرصہ بعد آسٹریلیائی سرزمین پر کامیاب، دوسرا ونڈے جیتا

ملبورن ، 16 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) محمد حفیظ اور شعیب ملک کی عمدہ بیٹنگ کی بدولت پاکستان نے آسٹریلیا کو دوسرے ونڈے میں چھ وکٹ سے شکست دے کر سیریز 1-1 سے برابر کردی۔ یہ پاکستان کی 12 سال بعد آسٹریلیا میں میزبانوں کے خلاف کسی ایک روزہ میچ میں فتح ہے۔ گزشتہ روز یہاں آسٹریلیا نے ایک مرتبہ پھر ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔ اوپنر عثمان خواجہ اور ڈیوڈ وارنر نے ٹیم کو 31 رنز کا آغاز فراہم کیا لیکن اسی اسکور پر جنید خان نے وارنر اور عثمان دونوں کو یکے بعد دیگرے پویلین بھیج کر آسٹریلین بیٹنگ لائن کو دھکہ لگایا۔ ابھی آسٹریلین ٹیم اس نقصان سے سنبھلی بھی نہ تھی کہ محمد عامر نے مچل مارش کو ’گولڈن ڈک‘ کی خفت سے دوچار کر کے پاکستان کو تیسری کامیابی دلائی۔ اس کے بعد ٹریوس ہیڈ اور اسٹیون نے 45 رنز کی شراکت قائم کر کے اسکور 86 تک پہنچایا لیکن حسن علی نے جارحانہ بیٹنگ کرنے والے ہیڈ کی اننگز کا خاتمہ کردیا۔ گلین میکس ویل گزشتہ میچ کی طرح اس میچ میں بھی اچھی فارم میں نظر آئے اور انہوں نے اسمتھ کے ساتھ پانچویں وکٹ کیلئے 42 رنز جوڑے لیکن عماد وسیم نے 23 کے انفرادی اسکور پر ان کی وکٹیں بکھیر دیں۔ پانچ وکٹیں گرنے کے بعد پہلے میچ کے مرد ِمیدان میتھیو ویڈ کی وکٹ پر آمد ہوئی اور انہوں نے اپنی کارکردگی کو دہراتے ہوئے کپتان اسمتھ کے ساتھ عمدہ شراکت قائم کی۔ دونوں کھلاڑیوں نے چھٹی وکٹ کیلئے 65 رنز جوڑے لیکن عماد کی گیند پر بڑا شاٹ کھیلنے کی ناکام کوشش میں اسمتھ اپنی وکٹ گنوا بیٹھے، اسمتھ نے 60 رنز بنائے۔ اگلے ہی اوور میں شعیب ملک کی گیند پر میتھیو ویڈ بھی اپنی وکٹیں محفوظ نہ رکھ سکے اور 35 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے۔ مچل اسٹارک، پیٹ کمنز اور جیمز فالکنر بھی زیادہ کچھ نہ کر سکے اور پوری ٹیم 220 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی۔ پاکستان کی جانب سے محمد عامر تین وکٹیں لے کر سب سے کامیاب بولر رہے جبکہ جنید خان اور عماد وسیم نے دو دو وکٹیں لیں۔ پاکستان نے 221 کے ٹارگٹ کا تعاقب شروع تو پہلے ہی اوور میں سلپ میں کھڑے اسٹیون اسمتھ پاکستان کے قائم مقام کپتان محمد حفیظ کا کیچ پکڑنے میں ناکام رہے۔ اس موقع کا حفیظ نے بھرپور فائدہ اٹھایا اور شرجیل کے ساتھ پہلی وکٹ کیلئے 68 رنز جوڑ کر ٹیم کو اچھی بنیاد فراہم کی، شرجیل 29 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے۔ حفیظ نے عمدہ بیٹنگ جاری رکھتے ہوئے بابر اعظم کے ساتھ دوسری وکٹ کیلئے 72 رنز جوڑے، بابر نے 34 رنز بنائے۔ کچھ ہی دیر بعد جیمز فالکنر کی گیند پر بڑا شاٹ کھیلنے میں ناکامی کی صورت میں حفیظ کو اپنی وکٹ گنوانی پڑی، انہوں نے 72 رنز بنائے۔ اس کے بعد اسکور آگے بڑھانے کی ذمے داری شعیب ملک نے اٹھائی اور اسد شفیق کے ساتھ مل کر ٹیم کو 195 تک پہنچا دیا، اسی اسکور پر اسد نے اسٹارک کی گیند پر اپنی وکٹ تحفتاً پیش کی۔ اس کے بعد عمر اکمل اور شعیب ملک نے مزید کسی نقصان کے بغیر ہی پاکستان کو ہدف تک رسائی دلا کر چھ وکٹ کی فتح سے ہمکنار کرادیا۔ شعیب 42 اور اکمل 18 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔ حفیظ کو عمدہ قیادت اور بیٹنگ پر ’مین آف دی میچ‘ قرار دیا گیا۔ حفیظ زیر قیادت پاکستان نے ٹیم میں تین تبدیلیاں کئے۔ پہلے ونڈے میں ناکامی سے دوچار ہونے والی ٹیم میں اَن فٹ کپتان اظہر علی کی جگہ اسد شفیق کو شامل کیا گیا۔ بولر وہاب ریاض کی جگہ جنید خان جبکہ محمد نواز کی جگہ شعیب ملک کو ٹیم میں شامل کیا گیا۔ پہلے میچ میں آسٹریلیا نے پاکستان کو 92 رنز سے شکست دی تھی۔ آسٹریلیا اور پاکستان کے درمیان تیسرا ونڈے 19 جنوری کو کھیلا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT