Tuesday , June 27 2017
Home / پاکستان / پاکستان میں تاریخی ہندو میریج بل منظور

پاکستان میں تاریخی ہندو میریج بل منظور

اسلام آباد ۔ 10 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) پاکستانی پارلیمنٹ نے طویل عرصہ سے جس تاریخی بل کا انتظار کیا جارہا تھا، اسے بالآخر منظور کرتے ہوئے ملک میں اقلیتی ہندوفرقہ کی شادیوں کو باقاعدہ بنانے کی جانب اہم پیشرفت کی ہے۔ اس طرح اب پاکستان کے ہندوؤں کو بھی اپنے پرسنل لاء کے مطابق اپنی شادیوں کو باقاعدہ بنانے کا حق حاصل ہوگا۔ قومی اسمبلی نے ہندو میریج بل 2017ء کو منظور کرلیا۔ قبل ازیں بل پر طویل مباحثہ بھی کیا گیا تھا۔ حیرت انگیز بات یہ ہیکہ پاکستانی پارلیمنٹ نے دوسری بار اس بل کو منظور کیا ہے۔ گذشتہ سال ستمبر میں پہلی بار اس بل کو منظوری حاصل ہوئی تھی۔ تاہم فروری میں جب سینیٹ میں اس بل کو پیش کیا گیا تھا تو اس وقت بل میں معمولی ترمیمات کی ضرورت کو محسوس کیا گیا تھا۔ قواعد کے مطابق پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں میں یکساں متن کو صدر کے پاس دستخط اور اس پر عمل آوری سے قبل منظور کیا جانا ضروری ہے۔ انگریزی اخبار ڈان کی رپورٹ کے مطابق سینیٹ نے ستمبر میں قومی اسمبلی میں منظور شدہ میریج بل میں معمولی ترمیم کی تھی۔ دونوں ایوانوں میں جس متن کو منظوری حاصل ہوگئی ہے ان میں ’’شادی پرت‘‘ بھی شامل ہے جو مسلمانوں کے ’’نکاح نامہ‘‘ کے مماثل ہے۔ ہندوؤں کی شادی کے وقت شادی پرت پر کسی پنڈت کی دستخط ہونا لازمی قرار دیا گیا ہے اور اس کے بعد متعلقہ سرکاری محکمہ میں اس کی رجسٹری کی جائے گی۔ شادی پرت ایک ایسی دستاویز ہوگی جس میں آٹھ کالم ہوں گے جس میں شادی کی تاریخ اور اسی طرح یونین کونسل، تحصیل، ٹاؤن اور ڈسٹرکٹ کا نام بھی درج کرنا ہوگا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT