Sunday , June 25 2017
Home / پاکستان / پاکستان میں دوہندوستانی علماء کا ہنوز پتہ نہیں چل سکا

پاکستان میں دوہندوستانی علماء کا ہنوز پتہ نہیں چل سکا

لاہور ؍ نئی دہلی ۔ 17 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان نے آج کہا کہ اس کو ہندوستان کے دو سرکردہ علمائے دین کے بارے میں ہنوز کوئی سراغ دستیاب نہیں ہوا ہے جو اس ملک کے دورہ پر پہنچنے کے بعد سے لاپتہ ہوگئے ہیں۔ ان میں نئی دہلی کی درگاہ حضرت نظام الدین ؒ کے بزرگ سجادہ نشین و متولی بھی شامل ہیں۔ پاکستانی دفترخارجہ کی ترجمان نفیس ذکریا نے پی ٹی آئی سے کہا کہ ’’ہندوستانی علماء کرام کا تاحال پتہ نہیں چلا ہے۔ تاہم اس ضمن میں ہم سرگرمی کے ساتھ کام کررہے ہیں‘‘۔ انہوں نے مزید کہا کہ ’’ہم تمام محکمہ جات کو اس مسئلہ کا جائزہ لینے کی ہدایت کرچکے ہیں‘‘۔ انہوں نے کہا کہ ان دو گمشدہ علماء کی تلاش کیلئے حکومت ہند نے گذشتہ روز دفترخارجہ سے درخواست کی تھی۔ وزیرخارجہ سشماسوراج نے آج کہا کہ حکومت اس مسئلہ کو پاکستان سے رجوع کی ہے۔ سواراج نے ٹوئیٹر پر لکھا کہ ’’ہم اس مسئلہ کو حکومت پاکستان سے رجوع کرچکے ہیں اور پاکستان میں ان دونوں ہندوستانی شہریوں کے بارے میں تازہ معلومات کی فراہمی کیلئے ان سے درخواست کی گئی ہے‘‘۔ مولانا سید آصف نظامی اور ان کے بھتیجہ ناظم نظامی کراچی ایرپورٹ پر لینڈنگ کے بعد سے لاپتہ۔ مولانا سید آصف نظامی دہلی کی تاریخی درگاہ حضرت نظام الدین اولیاء ؒ کے سجادہ نشین و متولی ہیں۔ ان دونوں نے قبل ازیں لاہور کی مشہور و معروف درگاہ داتا دربار میں حاضری دی تھی۔ بعدازاں کراچی روانگی کیلئے چہارشنبہ کو طیارہ میں سوار ہوئے تھے۔ وہ لاہور کا سفر کرنے سے قبل رشتہ داروں سے ملاقات کیلئے 8 مارچ کو بھی کراچی گئے تھے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT