Monday , August 21 2017
Home / پاکستان / پاکستان میں سائبرکرائم کا سخت قانون منظور

پاکستان میں سائبرکرائم کا سخت قانون منظور

متنازعہ قانون سازی پر بعض گوشوں کی تنقیدیں
اسلام آباد ۔ 11 اگست (سیاست ڈاٹ کام) پاکستانی پارلیمنٹ نے آج ایک متنازعہ سخت قانون سازی کو منظوری دے دی تاکہ ملک میں سائبر جرائم سے نمٹا جاسکے۔ اپوزیشن پارٹیوں اور گروپوں نے اس پر تنقید کی ہے کیونکہ ان کا ماننا ہیکہ اس سے لوگوں کے بنیادی حقوق متاثر ہوں گے۔ قومی اسمبلی یا ایوان زیریں نے سینیٹ کی جانب سے گذشتہ ماہ منظورہ مسودہ کو کسی ترمیم کے بغیر منظور کرلیا۔ قبل ازیں سینیٹ نے 50 ترامیم کئے تھے جسے قومی اسمبلی نے اپریل میں قبول کرلیا تھا۔ دونوں ایوانوں کی جانب سے یکساں مسودہ کی منظوری کے بعد اب یہ بل پر صدر ممنون حسین دستخط کریں گے جس کے ساتھ یہ قانون بن جائے گا اور ملک بھر میں لاگو ہوگا۔ اس قانون میں جملہ 21 جرائم انٹرنیٹ کے بیجا استعمال سے متعلق شامل کئے گئے ہیں۔ زائد از ایک درجن جرائم ایسے ہیں جن کیلئے نئے قانون میں جیل کی سزائیں تجویز کی گئی ہیں۔ ان میں دہشت گردی کیلئے سائبر گوشہ کا استعمال ، نفرت انگیز تقریر، فحش مواد کا تبادلہ، دھوکہ دہی اور غلط معلومات بہم پہنچانا شامل ہیں۔ اس قانون میں دہشت گردی کیلئے انٹرنیٹ کے استعمال پر 14 سال کی سزائے قید تجویز کی گئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT