Friday , September 22 2017
Home / پاکستان / پاکستان میں مزید آٹھ قیدیوں کو پھانسی، جملہ تعداد 310 ہوگئی

پاکستان میں مزید آٹھ قیدیوں کو پھانسی، جملہ تعداد 310 ہوگئی

اسلام آباد ۔ 15 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان نے صوبہ پنجاب کی مختلف جیلوں میں سزائے موت پانے والے 8 قیدیوں کی سزاؤں پر عمل آوری کرتے ہوئے انہیں پھانسی پر لٹکا دیا اور اس طرح گذشتہ سال ڈسمبر میں ایک طالبان کے ذریعہ ایک فوجی اسکول پر کئے گئے دہشت گرد حملے جس میں زائد از 150 افراد ہلاک ہوئے تھے جن میں اکثریت طلباء کی تھی، کے بعد ملک میں سزائے موت پر عائد امتناع برخاست کئے جانے کے بعد پھانسی پر چڑھائے گئے قیدیوں کی جملہ تعداد 310 ہوگئی۔ اب جبکہ 16 ڈسمبر کو طالبان کے خونریز حملہ کے دردناک واقعہ کو ایک سال مکمل ہورہا ہے، اس سے صرف ایک دن قبل ہی آٹھوں قیدیوں کو پھانسی پر لٹکا دینا شاید ایک سال کی تکمیل کا اشارہ ہے۔ ملگان، بہاولپور، گجرات، اٹک اور ڈیرہ غازی خان کی جیلوں میں سزائے موت پر عمل آوری کی گئی۔ ملتان بہاولپور اور گجرات میں دو دو قیدی کو اور ڈیزہ غازی خان اور اٹک میں ایک ایک قیدی کو تختہ دار پر لٹکا دیا گیا جن پر علحدہ علحدہ قتل کے الزامات ثابت ہوچکے تھے۔ حالانکہ بین الاقوامی انسانی حقوق واچ سزائے موت دیئے جانے کی سختی سے مخالفت کرتا رہا ہے۔ تاہم تازہ ترین واقعات یقینا انسانی حقوق واچ کیلئے سکتہ طاری کرنے کے مترادف

TOPPOPULARRECENT