Friday , September 22 2017
Home / پاکستان / پاکستان میں میانمار کے سفیر کی طلبی اور شدید احتجاج

پاکستان میں میانمار کے سفیر کی طلبی اور شدید احتجاج

تنازعہ کی یکسوئی کیلئے کوفی عنان کمیشن کی سفارشات پر عمل آوری کا مشورہ
اسلام آباد 9 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان نے آج میانمار کے سفیر کو طلب کرتے ہوئے روہنگیا مسلمانوں کے خلاف جاری تشدد پر سخت احتجاج درج کرایا۔ رکھین اسٹیٹ میں جاری ابتر صورتحال کی وجہ سے تقریباً 2 لاکھ 70 ہزار روہنگیائی باشندے بنگلہ دیش میں پناہ لینے پر مجبور ہوئے ہیں۔ معتمد خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے میانمار کے سفیر متعینہ پاکستان یو ون مائنٹ کو طلب کرتے ہوئے اِس تشدد کو روکنے اور روہنگیا مسلمانوں کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے مؤثر اقدامات پر زور دیا۔ دفتر خارجہ نے ایک بیان میں بتایا کہ تہمینہ جنجوعہ نے حکومت اور عوام کی جانب سے موجودہ صورتحال پر سخت احتجاج درج کرایا۔ اُنھوں نے حقوق انسانی کا تحفظ برقرار رکھنے پر زور دیا اور کہاکہ کسی بھی شہری کے ساتھ امتیازی سلوک روا نہیں رکھا جانا چاہئے۔ اُنھیں اِس بات کی آزادی ملنی چاہئے کہ وہ بلا خوف و خطر اپنی زندگی گزاریں اور اُنھیں نقل و حرکت کی بھی پوری آزادی ملنی چاہئے۔ اُنھوں نے کہاکہ اِس مسئلہ کی مؤثر یکسوئی کے لئے ضروری ہے کہ کافی عنان کمیشن کی سفارشات پر عمل کیا جائے جن میں تشدد کی روک تھام کے لئے کارروائی، امن کی برقراری، مصالحتی کوشش اور بلا رکاوٹ انسانی بنیادوں پر رسائی کے علاوہ شہریت کے مسئلہ کا احاطہ کیا گیا ہے۔ میانمار کے سفیر نے معتمد خارجہ کو تیقن دیا کہ وہ حکومت پاکستان اور عوام کی تشویش سے میانمار حکومت کو واقف کرائیں گے۔ اقوام متحدہ کے اندازے کے مطابق رکھین اسٹیٹ میں میانمار فوج کی شروع کی گئی کارروائی میں ایک ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ اقوام متحدہ نے توثیق کی ہے کہ گزشتہ دو ہفتوں کے دوران 2 لاکھ 70 ہزار افراد روہنگیا میں مظالم سے بچنے فرار ہوگئے اور بنگلہ دیش میں پناہ گزین ہیں۔ یہ تعداد مسلسل بڑھتی جارہی ہے جس کی وجہ سے انسانی بحران پیدا ہوگیا ہے۔ دنیا بھر میں میانمار فوج اور بدھسٹ دہشت گردوں کی اس کارروائی اور انسانیت سوز مظالم کی سخت مذمت کی جارہی ہے اور احتجاجی مظاہرے بھی جاری ہیں۔

وزیراعظم پاکستان نے F-16 طیارے میں سفر کیا
اسلام آباد 9 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کے نئے وزیراعظم شاہد خاخان عباسی امریکی ساختہ F-16 جنگی طیارے میں پرواز کرنے والے ملک کے پہلے وزیراعظم بن گئے ہیں۔ اُنھوں نے نئے قائم کردہ ایئر پاور سنٹر آف ایکسلنس کا دورہ کرتے ہوئے سنگل انجن کے حامل اِس سوپر سونک جنگی طیارے میں سفر کیا۔ 58 سالہ عباسی پاکستان کے پہلے وزیراعظم ہیں جو اِس طیارے میں سفر کررہے ہیں۔ امریکی ساختہ F-16 جنگی طیارے پاکستانی فضائیہ کے نمبر 9 جتھے میں شامل ہیں۔ عباسی کو فضائیہ کے سربراہ نے فوج کی جنگی تیاروں سے واقف کروایا۔

 

TOPPOPULARRECENT