Wednesday , September 20 2017
Home / پاکستان / پاکستان میں پھنسی لڑکی گیتا کی شادی کی تردید

پاکستان میں پھنسی لڑکی گیتا کی شادی کی تردید

کراچی۔18اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) ان اطلاعات کے درمیان کہ 14سال قبل سرحد پار کر کے غلطی سے پاکستان میں داخل ہوجانے والی لڑکی گیتا کا ایک شوہر اور ایک بیٹا بھی ہے جو اس کے آبائی دیہات میں اس کا منتظر ہیں ۔ 23سالہ لڑکی نے اس خبر کی سختی سے تردید کی کہ اس کی کبھی کوئی شادی ہوئی تھی ۔ ہندوستانی اخبارات نے گیتا کے آبائی دیہات ساہرسا ضلع ‘ بہار کے شہریوں نے کہا تھا کہ اُس کی شادی امیش مہاتو سے ہوئی تھی جب کہ وہ نابالغ تھی ۔ خبروں کے بموجب اسے ایک بیٹا بھی ہے جس عمر اب 12سال ہے ۔ مخیر عبدالستار ایدھی کے فرزند فیصل ایدھی نے کہا کہ یہ لوگ خبر کے مطابق گیتا کی شادی کی باتیں کررہے ہیں ۔ لیکن اس نے اسکائپ کے ذریعہ عوام کو اطلاع دی ہے کہ اس نے اپنے خاندان کو ایک تصویر میں دیکھ کر پہچانا ہے جو اسے ہندوستانی سفارت خانہ نے روانہ کی تھی ۔ انہوں نے لڑکی سے کہا کہ اس کی شادی ہوچکی ہے لیکن وہ اس خبر کی سختی سے تردید کرتی ہے ۔ ہم نے اسے اخبارات میں شائع ہونے والی تصویریں بتائی لیکن گیتا  نے تصویریں دیکھ کر کہا کہ یہ تصویریں اُس کی نہیں ہے ۔ فیصل نے تسلیم کیا کہ صورتحال پیچیدہ ہے چنانچہ اب گیتا کی نئی دہلی روانگی 26اکٹوبر کو عمل میں آئے گی۔ ہم بات چیت کے ذریعہ یہ معلوم کرنے کی کوشش کررہے ہیں کہ کیا وہ ہم سے چھپ کر کہیں اور روپوش تھیں ‘ کیا اسے کسی شخص نیج بہکایا ہے ۔ پاکستان اور ہندوستان میں گیتا کو وطن واپس لانے کی تیاریاں شروع ہوچکی ہیں کیونکہ اس نے تصویر دیکھ کر اپنے خاندان کو پہچان لیا ہے ۔ مبینہ طور پر جب گیتا غلطی سے سرحد پار کر کے پاکستان میں داخل ہوئی تھی تو اس کی عمر 7یا 8سال تھی ۔

TOPPOPULARRECENT