Saturday , September 23 2017
Home / پاکستان / پاکستان میں پھنسی گونگی و بہری خاتون گیتا کی جلد واپسی

پاکستان میں پھنسی گونگی و بہری خاتون گیتا کی جلد واپسی

خاندان کا پتہ چل گیا، ڈی این اے ٹسٹ کے بعد حوالگی : سشماسوراج
اسلام آباد/نئی دہلی۔15اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام)بہری گونگی ہندوستانی خاتون گیتا جو حادثاتی طور پر سرحد پارکرکے 10 سال قبل پاکستان میں داخل ہوگئی تھی اور اسی وقت سے وہاں مقیم تھی، جلد ہی وطن واپس آجائے گی۔ وزیر خارجہ سشما سوراج نے آج نئی دہلی میں کہا کہ گیتا جلد ہی ہندوستان واپس آجائے گی۔ اس کے خاندان کا پتہ چل گیا ہے اور اسے اس کے خاندان کے سپرد کردیا جائے گا لیکن اس سے پہلے ڈی این اے ٹسٹ کروایا جائے گا۔ 23 سالہ گیتا کو ایدھی فائونڈیشن کی بلقیس ایدھی نے گود لے لیا تھا اور وہ اس کے ساتھ کراچی میں مقیم تھی۔ وہ 15 سال تک پاکستان میں پھنسی رہیں۔ ایدھی فائونڈیشن کے ترجمان انور کاظمی نے بھی توثیق کی ہے کہ گیتا جلد ہی اپنے خاندان واپس پہنچ جائے گی۔ ذرائع کے بموجب گیتا نے اپنے والد، سوتیلی ماں اور بھائیوں اور بہنوں کو شناخت کرلیا ہے۔ ہندوستانی ہائی کمیشن اسلام آباد کی جانب سے خاندان کی ایک تصویر گیتا کے پاس روانہ کی گئی تھی۔ یہ خاندان بہار میں مقیم ہے۔ گیتا مبینہ طور پر 7 یا 8 سال کی تھی جبکہ اسے سمجھوتہ ایکسپریس میں پاکستانی رینجرس نے 15 سال قبل لاہور ریلوے اسٹیشن پر تنہا بیٹھا ہوا پایا تھا۔ پولیس نے اسے ایدھی فائونڈیشن لاہور کے سپرد کردیا گیا جہاں سے بعد میں وہ کراچی منتقل کردی گئی۔ ہندوستانی ہائی کمشنر برائے پاکستان ٹی سی اے راگھون اور اس کی بیوی نے وزیر خارجہ سشما سوراج کی ہدایت پر اس سے ملاقات کی تھی اور اس کے خاندان کی تلاش شروع کردی تھی۔ دفتر خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ پاکستان گیتا کی واپسی میں تعاون کرے گا۔ دفترخارجہ کے ترجمان قاضی خلیل اللہ نے کہا کہ گیتا کو حوالہ کرنے کیلئے ضابطہ کی ہم نے تکمیل کرلی ہے۔ ہندوستان اس ضمن میں واقف بھی کرادیا گیا ہے۔ ایدھی فاونڈیشن کے ترجمان انور کاظمی نے کہا کہ گیتا اپنے ارکان خاندان سے ملاقات کیلئے بے چین ہے۔ فاونڈیشن کے فیصل ایجی نے بتایا کہ گیتا کی 26 اکٹوبر کو حوالگی متوقع ہے۔

TOPPOPULARRECENT