Saturday , April 29 2017
Home / پاکستان / پاکستان میں ہندوستانی ڈپٹی ہائی کمشنر کی طلبی ‘ اسیمانند کی براء ت پر تشویش

پاکستان میں ہندوستانی ڈپٹی ہائی کمشنر کی طلبی ‘ اسیمانند کی براء ت پر تشویش

اسلام آباد 11 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان نے ہندوستان کے ڈپٹی ہائی کمشنر کو طلب کرتے ہوئے سمجھوتہ ایکسپریس ٹرین دھماکہ کے ملزم سوامی اسیمانند کو دہشت گردی کے ایک مقدمہ میں بری کئے جانے پر تشویش کا اظہار کیا ہے ۔ رات دیر گئے جاری کردہ ایک بیان میں دفتر خارجہ نے کہا کہ ڈپٹی ہائی کمشنر جے پی سنگھ کو ڈائرکٹر جنرل ( ساؤتھ ایشیا و سارک ) کے دفتر میں جمعہ کو طلب کیا گیا تھا تاکہ اجمیر شریف دھماکہ کیس میں اسیمانند کی برات پر تشویش ظاہر کی جاسکے ۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ اسیمانند نے سر عام اعتراف کیا تھا کہ وہ فبروری 2007 میں ہوئے سمجھوتہ ایکسپریس دہشت گرد دھماکہ کا اصل سرغنہ ہے اور اس نے برسر خدمت ہندوستانی فوجی عہدیدار کرنل پروہت کی سمجھوتہ ایکسپریس حملے میں اپنے ساتھی کی حیثیت سے شناخت کی تھی ۔ سمجھوتہ ایکسپریس کے دو کوچس میں 18 فبروری 2007 کو ہوئے دھماکوں میں جملہ 68 افراد ہلاک ہوگئے تھے ۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ 42 پاکستانی شہری سمجھوتہ ٹرین دھماکہ میں زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے تھے ۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ حکومت پاکستان کو ہندوستان سے امید ہے کہ وہ ان تمام افراد کو کیفر کردار تک پہونچائے گا جو سمجھوتہ ایکسپریس دہشت گرد دھماکہ کے سنگین جرم میں ملوث ہیں۔ جمعرات کو دفتر خارجہ کے ترجمان نفیس ذکریا نے بھی ہندوستان سے کہا تھا کہ سمجھوتہ ایکسپریس دھماکہ کے ملزمین کو کیفر کردار تک پہونچایا جائے اور اس نے 2007 کے اجمیر دھماکہ کیس سے اسیمانند کی براء ت کو افسوسناک قرار دیا تھا ۔ اسیمانند سمجھوتہ ایکسیرپس دھماکہ کیس میں بھی ملزم ہے ۔ نفیس ذکریا نے کہا کہ گذشتہ چند برسوں سے دیکھا جا رہا ہے کہ جو لوگ سمجھوتہ ایکسپریس دھماکہ میں ملوث ہیں انہیں بری کیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم حکومت ہند کے ساتھ اس مسئلہ کو رجوع کر رہے ہیں اور ہمیں امید ہے کہ اب تک ہوئی تحقیقات کی پیشرفت سے ہمیں واقف کروایا جائیگا ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT